الطاف کے بیان پر سندھ ، پنجاب اور آزاد کشمیر اسمبلیوں میں مذمتی قراردادیں, وزیراعظم آزاد کشمیر کا 6 اگست کو مظاہروں کا اعلان

03 اگست 2015 (21:25)

پاک فوج سمیت دیگر اداروں پر الطاف حسین کے نفرت انگیز بیانات کی مختلف جماعتوں کی جانب سے شدید مذمت کی جا رہی ہے، تحریک انصاف نے سندھ اور پنجاب اسمبلی میں مذمتی قراردادیں جمع کرا دیں۔ سندھ اسمبلی میں الطاف حسین کے خلاف قرارداد رکن اسمبلی ثمر علی خان نے جمع کرائی۔ میڈیا سے گفتگو میں ثمر علی خان کا کہنا تھا کہ سیکورٹی اداروں کے خلاف بیانات قابل مذمت ہیں،، الطاف حسین کو اس عمل سے نہ روکنا وفاقی حکومت کی نااہلی ہے،،پنجاب اسمبلی میں قرارداد اپوزیشن لیڈ محمود الرشید کی طرف سے جمع کرائی گئی جس میں الطاف حسین کو انٹرپول کے ذریعے واپس لا کر غداری کا مقدمہ قائم کرنے کا مطالبہ کیا گیا ،خیبرپی کے اسمبلی میں الطاف حسین کیخلاف قراداد پیش نہ کی جا سکی ، سپیکر اسد قیصر نے ہدایت کی کہ قرار داد اسمبلی سیکرٹریٹ میں جمع کرائی جائے،تحریک انصاف کے رکن شوکت یوسفزئی قرار داد پیش کرنا چاہتے تھے، اب یہ قرارداد منگل کو جمع کرائی جائیگی-
ادھر آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی میں الطاف حسین کیخلاف قرارداد وزیر خزانہ چودھری لطیف اکبر نے جمع کرائی، وزیراعظم آزاد کشمیر چودھری عبدالمجید نے جمعرات کو الطاف حسین کیخلاف ریلیوں کا اعلان کرتے ہوئے ایم کیو ایم کے وزراء کو اپنے قائد سے اظہار لا تعلقی کرنے یا وزارتوں سے استعفے دینے کے لیے بہتر گھنٹے کا الٹی میٹم دے دیا، الطاف حسین کی تقریرکیخلاف حکومتی جماعت سمیت تمام اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے سخت رد عمل دیکھنے میں آیاہے ۔