جمہویت کی دعویدار بھارتی حکومت اپنے ہی ارکان لوک سبھا پر چڑھ دوڑی, سونیا نے مودی سرکار پر کڑی تنقید کرتے ہوئے اسے ملک کے لئے سیاہ دن قرار دے دیا

03 اگست 2015 (21:09)

یہ مناظر کسی جھگڑے کے نہیں بلکہ دنیا کی سب سے بڑی نام نہاد جمہوریت بھارت کی لوک سبھا کے ہیں، جہاں کانگریس کے ارکان آئی پی ایل فراڈ کے مرکزی کردار للت مودی اور ویاپام کے خلاف سراپا احتجاج ہوئے۔
لیکن اپوزیشن کی جانب سے کیے جانے والا احتجاج مودی سرکار سے تعلق رکھنے والی لوک سبھا سپیکر سُمترا مہاجن کو ایک آنکھ نہ بھایا اور غصے میں آگ بگولا ہوکر انہوں نے چوالیس میں سے پچیس کانگریس ارکان کو آئندہ پانچ اجلاسوں کے لئے معطل کردیا ۔
بھارت کی دوسری بڑی سیاسی جماعت کانگریس کی سربراہ سونیا گاندھی نے بی جے پی حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور ارکان کی معطلی کو بھارت کا سیاہ دن قرار دے دیا۔ دوسری جانب بھارتی حکومت کے اس غیر جمہوری اقدام پر ملک کی دیگر پانچ سیاسی جماعتوں نے بھی لوک سبھا سے بائیکاٹ کردیا ہے۔