مکئی کی درآمد پر 25 فیصد ڈیوٹی‘ 15 ہزار ٹن چنا خریدا جائیگا: وفاقی کابینہ

02 جولائی 2009
اسلام آباد (آن لائن) وفاقی کابینہ نے مکئی کی درآمد پر 25 فیصد ڈیوٹی عائد کرنے، چنے کی قیمت مستحکم رکھنے کے لئے 15 ہزار ٹن چنا پاسکو کے ذریعے خریدنے اور صدر زرداری کے دورہ چین میں کئے گئے خدمات کے شعبہ میں باہمی تجارت کے معاہدہ کی توثیق کر دی۔ وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی کی زیرصدارت ہونے والے کابینہ کے اجلاس میں ہونے والے فیصلوں کے بارے میں میڈیا کو آگاہ کرتے ہوئے وزیر اطلاعات قمر الزمان کائرہ نے کہا کہ کابینہ نے ملک میں کسانوں کو چنے اور مکئی کی اچھی قیمت دینے کی غرض سے دو اہم فیصلے کئے ہیں۔ اس کے علاوہ کابینہ نے امارات، پولینڈ اور چلی کے ساتھ ویزا معاہدہ کیلئے بات چیت شروع کرنے سوڈان اور کیوبا کے ساتھ کھیلوں کے شعبہ میں معاہدہ کرنے کی منظوری دے دی۔ کابینہ نے صدر کے دورہ چین کے موقع پر خدمات کے شعبے میں باہمی تجارت کے حوالے سے کئے گئے معاہدہ کی توثیق کی‘ اس معاہدہ سے دونوں ممالک کے درمیان خدمات کے شعبہ میں تعاون مزید بڑھے گا اور نوکریوں کے نئے مواقع پیدا ہوں گے۔ انہوں نے سوالات کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کو عالمی مارکیٹ سے منسلک کر دیا ہے ماضی میں حکومتی سبسڈی کے نام پر عوام کے ساتھ مذاق کرتی رہی ہیں ہم ایسا نہیں کریں گے ہم نے فکس کاربن ٹیکس عائد کیا ہے جو پٹرولیم کی قیمت کم یا زیادہ ہونے سے تبدیل نہیں ہو گا جب عالمی مارکیٹ میں قیمت کم ہو گی تو ہم اس کا فائدہ عوام تک پہنچائیں گے‘ حکومت کا کام منافع حاصل کرنا نہیں ہے جو ریوینیو حاصل ہوتا ہے وہ عوام پر ہی خرچ کیا جاتا ہے اگر حکومت سخت فیصلہ نہ کرتی تو آج اتنا بڑا ترقیاتی بجٹ کیسے دیتی۔ آئی ڈی پیز کی واپسی کا ٹائم فریم صوبائی حکومت دے گی جس پر وفاقی حکومت عمل کرے گی امید ہے کہ متاثرین کی بحالی جلد ہو جائے گی۔