مقبوضہ کشمیر میں مکمل ہڑتال‘ مظاہرے ۔۔۔ بارہمولہ میں فوج کی جگہ پولیس تعینات

02 جولائی 2009
سرینگر (اے ایف پی+ اے این این) مقبوضہ کشمیر میں پولیس تشدد سے زخمی ہونے والا ایک اور نوجوان گزشتہ روز دم توڑ گیا۔ اس طرح مرنے والوں کی تعداد چار ہو گئی مختلف شہروں میں ہزاروں افراد کرفیو کی پابندیاں توڑ کر گھروں سے نکل آئے اور مظاہرے کئے۔ بارہ مولہ میں ہزاروں مظاہرین نے پولیس فائرنگ سے شہید ہونے والے نوجوان کی میت اٹھا کر زبردست احتجاجی ریلی نکالی اور ’’خون کے بدلے خون‘‘ ’’ہم آزادی چاہتے ہیں‘‘ کے نعرے لگائے۔ سوپور میں بھی ہزاروں افراد نے کرفیو توڑ کر احتجاجی جلوس نکالا اور بھارتی مظالم کے خلاف نعرے بازی کی۔ سرینگر اور دیگر شہروں میں مکمل ہڑتال سے کاروبار زندگی ٹھپ ہو کر رہ گیا۔ ہڑتال کے باعث سکول دکانیں اور دفاتر بند رہے۔ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے ایک خاتون سمیت کالعدم لشکر طیبہ کے تین ورکروں کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ کشید گی کم کرنے کیلئے بارہ مولہ میں فوج کی جگہ پولیس تعینات کی جا رہی ہے۔