پاکستان اور ایران کے درمیان 1000 میگاواٹ بجلی کی درآمد کے معاہدے پر دستخط ہو گئے

01 جون 2012
لاہور (نیوز رپورٹر + خصوصی رپورٹر) پاکستان اور ایران کے درمیان 1000 میگاواٹ بجلی کی درآمد کے معاہدے پر دستخط ہو گئے ہیں۔ وزارت پانی و بجلی کی طرف سے بھیجے گئے پاکستانی وفد اور ایرانی وزیر توانائی نے معاہدے پر دستخط کئے۔ معاہدے کے مطابق بجلی کی درآمد کا یہ منصوبہ تین سالوں میں مکمل ہو گا جس کی فنڈنگ 70 فیصد ایران اور 30 فیصد پاکستان کرے گا۔ پاکستان کی طرف سے معاہدے پر مینجنگ ڈائریکٹر این ٹی ڈی سی ایل رسول خان محسود جبکہ ایران کی طرف سے نائب وزیر توانائی آقائے محمد بہزاد نے دستخط کئے۔ معاہدے کے مطابق حکومت پاکستان اور ایران کے درمیان مذاکرات کے نتیجے میں بجلی کے نرخ 8 سینٹ فی یونٹ طے پائے ہیں جبکہ عالمی منڈی میں تیل کی قیمتیں بڑھنے کی صورت میں بجلی کی فی یونٹ قیمت زیادہ سے زیادہ 11 سینٹ ہو گی۔ ایرانی صدر احمدی نژاد نے پاکستان کے حالیہ دورے کے دوران صدر زرداری اور وزیراعظم گیلانی کو بجلی کے بحران پر قابو پانے میں مدد دینے کی پیشکش کی تھی۔ علاوہ ازیں پنجاب حکومت اور ایران کے صوبے فارس کے درمیان اقتصادی تعاون میں اضافے کے حوالے سے مفاہمتی یادداشت پر دستخط ہوئے ہیں۔ اس سلسلے میں منعقد ہونے والی تقریب میں لاہور کے دورے پر آئے ایرانی صوبہ فارس کے گورنر انجینئر حسین صادق عابدین، ایرانی قونصل جنرل حسین نبی اسدی، سینئر مشیر سردار ذوالفقار علی خان کھوسہ، صوبائی وزراءمجتبیٰ شجاع الرحمن، چودھری عبدالغفور، پنجاب بورڈ آف انوسٹمنٹ اینڈ ٹریڈ کے وائس چیئرمین ڈاکٹر مفتاح اسماعیل اور شیراز چیمبر کے صدر فریدوں فرغانی موجود تھے۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے گورنر فارس حسین صادق عابدین نے کہا کہ ایرانی سرمایہ کاروں نے دورہ لاہور میں پنجاب کے کاروباری برادری سے مفید مذاکرات کئے ہیں اور پنجاب میں ایرانی بزنس مینوں کے لئے سرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجود ہیں۔ سردار ذوالفقار کھوسہ نے مفاہمتی یادداشت پر دستخط کی تقریب کو دونوں ملکوں کے دوران تعاون میں ایک اہم سنگ میل قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ 2009ءمیں پنجاب اور ایرانی صوبہ خراسان کے درمیان اشتراک کار کا تسلسل ہے۔ وائس چیئرمین پنجاب سرمایہ کاری بورڈ ڈاکٹر مفتاح اسماعیل نے کہا کہ پاکستان اور ایران ایک دوسرے کی ضروریات پوری کرنے میں تعاون کر سکتے ہیں۔ دریں اثناء پنجاب بورڈ آف انوسٹمنٹ اینڈ ٹریڈ کے زیر اہتمام ”ایران فیئر 2012ئ“ کا آغاز ہو گیا ہے۔ افتتاحی تقریب میں ڈپٹی گورنر خراسان عباس نیاوند، سینئر مشیر وزیراعلی پنجاب سردار ذوالفقار علی خان کھوسہ، وائس چیئرمین انوسٹمنٹ بورڈ ڈاکٹر مفتاح اسماعیل اور دونوں ممالک کے صنعت کار شریک ہوئے۔نوائے وقت رپورٹ کے مطابق گورنر حسین صادق عابدین نے کہا ہے کہ پاک ایران دوستی کے بارے میں امریکہ کچھ بھی کہے اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔ لاہور ایئرپورٹ پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ امریکہ کا کام میڈیا کے ذریعے محض پراپیگنڈا کرنا ہے۔