کراچی میں خونریزی کا سلسلہ نہ رک سکا، فائرنگ کے مختلف واقعات ميں چھ افراد اپنی جانوں سے ہاتھ دھوبيٹھے، پانچ افراد زخمی ہوگئے.

01 جون 2012 (23:08)
صدر آصف علی زرداری کئی روز سے کراچی میں قیام پذیر ہیں لیکن گزشتہ ماہ سے جاری ٹارگٹ کلنگ کا سلسلہ آج بھی ختم نہ ہو سکا۔پہلا واقعہ فيڈرل بی ايريا بلاک سولہ ميں پيش آيا جہاں نامعلوم افراد نے گھر کے باہر کھڑے وقاص نامی شخص کو گولیاں مارکر ہلاک کرديا۔کھارا در ابل چوک کے قريب مسلح افراد نے فائرنگ کرکے انیس سالہ شاہنواز کو ہلاک کردیا، سرجاني ٹاون خدا کي بستي ميں اڑتیس سالہ محبوب، چالیس سالہ غلام قادر اور پنیتیس سالہ نامعلوم شخص کو فائرنگ کر کے قتل کرديا گیا جبکہ تین افراد طيب ، عبد القادر اور نعمت زخمي ہوگئے۔ لانڈھی ريڑھي گوٹھ کے قريب رکشہ ڈرائیور فيصل کي دو دن پراني لاش برآمد ہوئی۔ قائدآباد ، گلستان جوہر اور کورنگي ميں فائرنگ سے تين افراد زخمي ہوئے۔واضح رہے کہ گزشتہ ماہ فائرنگ کے مختلف واقعات ميں ایک سو تہتر زائد افراد جاں بحق جبکہ دو سو اٹھتر زخمي ہوئے تھے۔