پربت پربت وادی وادی

01 جون 2012
پربت پربت وادی وادی
بادِ صبا نے کی منادی
لے کے رہیں گے ہم کشمیر
آج ہے یوم تکبیر
دیکھ! نہ ہم سے بیر کما
ہم چاہتے ہیں خیر منا
ہٹ دھرمی‘ سینہ زوری چھوڑ
کشمیر کا خطہ آج ہی چھوڑ
تب ہے تو ہمارا پیارا ویر
آج ہے یوم تکبیر
(غلام زادہ نعمان صابری لاہور)
ہوئے تم دوست جس کے.... امریکہ
جس نے بھی ہے تم پہ اعتبار کیا
یار بنا کر تو نے اس پہ وار کیا
ایٹم بم گرا کر سوئے لوگوں پر
انسانیت کا تو نے پرچار کیا
ادب سے پیش کیا تختِ ابلیسی خود
شیطانوں نے جب تیرا دیدار کیا
بوسنیا، عراق، فلسطیں جل بیٹھے
لیبیا کا اب تو نے بیڑہ پار کیا
دوست نہیں یہود نصاریٰ ملت کے
واضح تم پہ اللہ نے کئی بار کیا
(جاوید احمد عابد شفیعی 03134082892)