اپوزیشن جمہوری عمل پر یقین رکھتی ہےتو حکومت کےساتھ ملکر نگران سیٹ اپ لائے:احسن اقبال

01 اپریل 2018 (15:05)

احسن اقبال نے کہا ہے کہ اپوزیشن جمہوری عمل پر یقین رکھتی ہے تو حکومت کے ساتھ ملکر نگران سیٹ اپ لائے،یہ پیپلز پارٹی اور اپوزیشن کا امتحان ہے‘پاکستان کو بنجر نہیں ہونے دیں گے اگر اتفاق کے ساتھ چلتے رہے تو پانی کا مسئلہ حل کر لیں گے،ہمیں عالمی سطح پر بھارت سے مقابلہ کرنے کی ضرورت ہے ۔ نارووال میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ امید ہے کہ اپوزیشن لیڈرخورشید شاہ اوروزیر اعظم نگران سیٹ اپ پر اتفاق کرنے میں کامیاب ہو جائیں گے جو بروقت صاف و شفاف الیکشن کی ضمانت فراہم کر سکے،اگر ایسا نہ ہوا تو پھر لوگ سمجھیں گے کہ اپوزیشن کو کسی نے اشارہ کیا ہے اور یہ کسی اور کا کھیل، کھیل رہے ہیں تا کہ الیکشن کمیشن یا دوسرے طریقہ سے من پسند نگران سیٹ اپ لایا جا سکے ۔ وفاقی وزیر نے پانی کے مسئلہ پر کہا کہ پاکستان کو بنجر نہیں ہونے دیں گے اگر اتفاق کے ساتھ چلتے رہے تو پانی کا مسئلہ حل کر لیں گے،ہمیں عالمی سطح پر بھارت سے مقابلہ کرنے کی ضرورت ہے۔ہمارا پانی سمندر میں بہتا رہے گا تو ہم بھارت کو گلہ نہیں کر سکتے ۔دریں اثناءانہوں نے نواحی گاﺅں میدیاں میں عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مسلم لیگ نے ووٹ کے تقدس کو پامال نہیں ہونے دیاہم چند ماہ بعد دوبارہ عوام کی عدالت میں جائیں گے، حکومت نے ملک سے توانائی کے بحران اور دہشت گردی کا خاتمہ کیا اور ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کیاجبکہ پی ٹی آئی اور پیپلز پارٹی نے اپنے صوبوں کا برا حال کر دیا۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم شاہدخاقان عباسی جلد نارووال کا دورہ کر کے لاہور ڈبل روڈ کا سنگ بنیاد رکھیں گے جس سے اگلے پانچ سے دس سالوں میں نارووال کا شمار پہلے دس اضلاع میں ہو گا۔