جمہوری نظام چلنا چاہے ،18ترمیم کو کوئی خطرہ نہیں،لیاقت بلوچ

01 اپریل 2018

اسلام آباد(نمائندہ خصوصی) جماعت اسلامی پاکستان اور متحدہ مجلس عمل کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے دینی جماعتوں کے رہنمائوں سے ملاقات میں کہاہے کہ انتخابات کے التواء کے خواب کون دکھا رہاہے ۔ آئین کے مطابق قومی جمہوری پارلیمانی نظام چلنا چاہیے وگرنہ جمہوریت ، ریاست اور حکومت کو ناقابل تلافی نقصان پہنچے گا ۔ وزیراعظم اور چیف جسٹس کی ملاقات بے مقصد تھی ۔ فریاد بغیر التجا کے تھی تو بڑی بری بات اگر کوئی مقاصد تھے تو چھپانے کی بجائے منظر عام پر لائے جائیں ۔ لیاقت بلوچ نے کہاکہ متحدہ مجلس عمل خیبرپختونخوا ، بلوچستان اور سندھ میں گہرے مثبت سیاسی انتخابی اثرات ڈالے گی ۔ پنجاب میں بھی علماء ، مشائخ باہمی دست و گریبان ہونے کی بجائے متحد ہو جائیں ، سیاسی بادشاہت ، موروثیت اورکرپشن کو شکست ہوگی ۔ پنجاب کی سیاست کو بدنامی دینے والے عناصر کو متحدہ مجلس عمل ہی شکست دے گی ۔ لیاقت بلوچ نے کہاکہ 18 ویں آئینی ترمیم کو فی الحال کوئی خطرہ نہیں ۔