جنسی درندگی بڑھنے سے پنجاب عورتوں ، بچوں، لڑکیوں کیلئے غیر محفوظ ہو چکا: نصیر احمد

01 اپریل 2018

لاہور(خبر نگار)پیپلز پارٹی انسانی حقوق ونگ لاہور کے رہنماء نصیر احمد، عبدالکریم میو ، ملک آصف بھلہ،عثمان الحق قریشی، غلام حسین کھوکھر، حمزہ شیخ، حمزہ شکور ، اختر شاہ نے کہاہے کہ پنجاب خواتین، بچوں ،خصوصاکم سن بچیوں کے لیے غیر محفوظ ہو چکا ہے جنسی درندگی کے واقعات کا تشویش نا حد تک اضافہ لمحہ فکریہ ہے جنسی درندگی کے ملزمان اتنے با اثر ہوتے ہیں کہ آج تک ان کو سزا نہیں ہوئی ہے بلکہ ان کے خلاف مقدمات درج کروانے کے لیے مدعیوں کو سڑکوں پر احتجاج کرنا پڑتا ہے اور کئی مدعی خواتین نے انصاف کے حصول کے لیے خود کو آگ بھی لگا لی ہے ۔ پنجاب میں حکومت نام کی کوئی چیز نہیں ہے ۔مسلم لیگ ن کے موجودہ اور سابق دور میں آبرویزی اغواء برائے تاوان کم سن بچوں اور بچیوں کے ساتھ درندگی کے جتنے واقعات ہوئے ہیں اتنے پاکستان کی 70 سالہ تاریخ میں نہیں ہوئے جرائم کا گراف دن بدن بڑھا جا رہا ہے ۔