ویسٹ انڈیز ٹیم کا پاکستان کے خلاف 3 ٹی 20 میچز کی سیریز

01 اپریل 2018

لاہور+ کراچی ( نمائندہسپورٹس +سپورٹس رپورٹر ) پاکستان کے خلاف 3 ٹی 20 میچز کی سیریز کھیلنے کے لئے ویسٹ انڈیز کرکٹ ٹیم کے 11کھلاڑی پہلی فلائٹ کے ذریعے کراچی پہنچے جبکہ دوسرے رات دوسری فلائیٹ سے آئے۔کراچی ائر پورٹ پر ویسٹ انڈیز ٹیم کا استقبال وزیر کھیل سندھ سردار محمد بخش مہر نے کیا ،انہوں نے انہیں خوش آمدید کہا اور کھلاڑیوں کو سندھی ٹوپی اور اجرک بھی پیش کی۔ویسٹ انڈیز نے دورہ پاکستان کےلئے جیسن محمد کو قیادت سونپی ہے جبکہ کھلاڑیوں میں سیموئل بدری، ریاد ایمرٹ، آندرے فلیچر، آندرے میک کارتھی، کیمو پال، ویرا سیمی پرمال، رومین پاویل، دنیش رام دین، مارلن سیموئلز، اوڈین سمتھ، چیڈوک والٹن اور کیسرک ولیمز شامل ہیں۔کریبیئن ٹیم نے آخری بار 2006 میں برائن لارا کی قیادت میں پاکستان کا دورہ کیا تھا ۔پاکستان اور ویسٹ انڈیز سیریز کیلئے امپائر ز اور میچ آفیشلز کا اعلان کردیا گیا ہے جبکہ میچ ریفری کے فرائض ڈیوڈ بون ادا کریں گے۔سیریز کے پہلے میچ میں احسن رضا اور شوزب رضا فیلڈ احمد شہاب ٹی وی امپائر ہوں کے فرائض انجام دیں گے۔دوسرے میچ میں احمد شہاب اور شوزب رضا فیلڈ اور احسن رضا ٹی وی امپائر کی ذمہ داری ادا کریں گے جبکہ تیسرے میچ میں علیم ڈار اور احسن رضا فیلڈ جبکہ شوزب رضا ٹی وی امپائر کے فرائض ادا کریں گے۔ویسٹ انڈیز کے خلاف پہلے ٹی ٹونٹی میں پاکستان کی ٹیم میں احمد شہزاد، فخر زمان، بابر اعظم، شعیب ملک، آصف علی، سرفراز احمد(کپتان)، حسین طلعت ، فہیم اشرف ، محمد نواز، شاداب خان، محمد عامر اور حسن علی شامل ہوں گے ۔ کراچی میں9سال تین ماہ کے بعد انٹر نیشنل کرکٹ بحال ہو جائےگی جب آج پاکستان اور ویسٹ انڈیز کی کرکٹ ٹیموں کے مابین تین ٹی20انٹر نیشنل میچوں کی سیریز کا پہلا میچ آج نیشنل سٹیڈیم کراچی میں ہوگاجس کے انتظامات کو حتمی شکل دے دی گئی ،عالمی ٹی20چیمپئن ویسٹ انڈیز اور عالمی نمبر ون پاکستان کے درمیان سیریز کا پہلا میچ را ت کو آٹھ بجے شروع ہوگا۔36ہزار سے زائدنشستوں کی گنجائش رکھنے والے کراچی کے تاریخی نیشنل سٹیڈیم میں میچ کے حوالے سے سکیورٹی کے خصوصی انتظامات کئے گئے ہیں ۔نیشنل سٹیڈیم کراچی میں سکیورٹی انتظامات کے سلسلے میں بم ڈسپوزل سکواڈ نے مختلف حصوں کی چیکنگ کی جبکہ پاکستان رینجرز سندھ کے سراغ رساں کتے کی مدد سے متعدد مقامات کو خصوصی طور پر چیک کیا گیا ۔سراغ رساں کتا گراﺅنڈ کے بعد ڈریسنگ روم بھی پہنچ گیا جہاں اس نے کھلاڑیوں کے سامان کی بھی چیکنگ کی۔