کرم ایجنسی میں مذہبی فسادات کے دوران بے دخل سینکڑوں متاثرہ خاندانوں کی واپسی کیلئے انتظامات مکمل

01 اپریل 2018

کرم ایجنسی (نامہ نگار(متاثرین سدہ و پاڑہ چنار کی دوبارہ آبادکاری جلد شروع ہوگی ،معاہدہ مری کے مطابق تمام مقبوضہ علاقوں کو پاک آرمی کی زیرنگرانی خالی کرایا جائے گا،1982 اور83میں مذہبی فسادات کے دوران سدہ شہر سے بے دخل کئے جانے والے سینکڑوں گھرانوں کی باعزت واپس جلد ہوگی۔ان خیالات کا اظہار سدہ چنار ہاوس میں 73برگیڈکے برگیڈئر اخترعلیم نے قبائلی جرگے سے خطاب کے دوران کیا انہوں نے کہا کہ کرم ایجنسی میں مکمل طور پر امن امان قائم کرنے کے لئے متاثرین کی بحالی وقت کی اہم ضرورت ہے جس کے لئے پاک آرمی، پولیٹیکل انتظامیہ اور سکیورٹی فورسز سہولیات کو بروئے کار لا رہی ہیں ہفتہ کے روز سدہ چنار ہاوس میں اہلسنت کی چھ اقوام اور اہل تشیع کے مشران کے درمیان ایک اہم جرگہ ہوا جس میں دونوں جانب سے کثیر تعدا دمیں مشران نے شرکت کی ،متفقہ طور پر یہ فیصلہ کیا گیا کہ ایجنسی میں مذہبی فسادات کے دوران بے دخل ہونے والے متاثرین کو دوبارہ اپنے علاقوں میں آباد کیا جائے گا جس کے لئے تمام تر انتظامات مکمل کئے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاک آرمی ،سکیورٹی فورسز و پولیٹیکل انتظامیہ اور قبائلی مشران کی قربانیوں سے ایجنسی میں مکمل طور پر امن و آشتی کا گہوار بن چکا ہے۔اب ضرورت اس امر کی ہے کہ بے دخل خاندانوں کو اپنے علاقوں میں دوبار آباد کرنا ہے جس کے لئے د ونوں جانب مشران کا متفق ہونا ضروری ہے جرگے سے خطاب کرتے ہوئے پولیٹیکل ایجنٹ بصیر خان وزیر نے کہا کہ پاک آرمی، سکیورٹی فورسزاور پولیٹیکل انتظامیہ نے متاثرین کے جملہ مسائل اور آباد کاری میں مدد کے لئے فنڈفراہم کردیا ہے جس سے متاثرین سدہ اور پاڑہ چنار اپنے گھروں کو بنانے میں مددکاگار ثابت ہوگا امداد کی مد میں ملنے والی رقم سے پہلے کیپ میں متاثرین اپنے گھروں کی تعمیر کا کام کرینگے جس کے بعد اپنے خاندانوں سمیت اپنے علاقوں میں باعزت واپسی ہوگی دوسرے جانب قبائلی عمائدین و مشران ملک فخرزمان ،ملک عبدالولی علشیزئی ،ملک عبد لمنان بنگش اور ملک محبوب علی خان اور ملک وقار خان بنگش نے پاک آرمی و پولیٹیکل انتظامیہ کے اس اقدام کو سراہاتے ہوئے کہا کہ متاثرین سدہ اور ہم ایک دوسرے کے ساتھ ملکر علاقے کی ترقی و خوشحالی میں اپنا کردار ادا کرسکتے ہے امید ہے دیگر اہلسنت بھی ہمارے ساتھ مکمل طور پر تعاون کرینگے جرگے کے بعد دونوں فریق اور اعلی افسران نے مقبوضہ علاقوں کا دورہ کیا اس موقع پر اسسٹنٹ پولیٹیکل ایجنٹ لوئر طارق حسن ،اسسٹنٹ پولیٹیکل ایجنٹ ارشد جمیل اور 114وینگ کمانڈر کرنل مقصود بھی موجود تھے