مال روڈ پر احتجاج و دھرنے بند کرائے جائیں: ملک طاہر

01 اپریل 2018

لاہور(کامرس رپورٹر) لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے دھرنوں اور احتجاجوں کے نہ رکنے والے سلسلے اور اس پر عائد پابندی کی دھجیاں اڑانے کے عمل کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے حکومت پر زور دیا ہے کہ یہ تماشا گیری سختی سے بند کی جائے کیونکہ اس کی وجہ سے کاروباری سرگرمیوں کو ناقابل تلافی نقصان ہورہاہے۔ لاہور چیمبر کے صدر ملک طاہر جاوید، سینئر نائب صدر خواجہ خاور رشید اور نائب صدر ذیشان خلیل نے کہا کہ اہم سڑکوں پر آئے روز دھرنے اور احتجاج ایک مذاق بن کر رہ گیا ہے، جس کا جب دل چاہے مال روڈ سمیت اہم سڑکیں بند کرکے تاجر برادری اور عوام کے لیے شدید پریشانی کا سبب بن جاتے ہیں۔ جو اب قابل برداشت نہیں رہا، پنجاب حکومت پولیس اور قانون نافذ کرنے والے دیگر اداروں کے ذریعے اس پابندی پر انتہائی سختی سے عمل درآمد کرائے۔ انہوں نے کہا کہ مال روڈ ایک اہم تجارتی مرکز ہے اور اس کے گرد و نواح میں مزید بہت سی اہم مارکیٹیں ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ قانون کے تحت مال روڈ پر احتجاجی مظاہروں اور دھرنوں پر پابندی عائد ہے لیکن آئے روز اس قانون کی دھجیاں اڑا دی جاتی ہیں جس کی وجہ سے تاجروں کے کاروبار ٹھپ ہوجاتے ہیں اور شہر بھر میں بدترین ٹریفک جام کا مسئلہ پیدا ہوجاتا ہے جبکہ مظاہرین کی آڑ میں سماج دشمن عناصر بھی فائدہ اٹھاسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بے دھڑک احتجاجی مظاہروں اور جلسے جلوسوں سے یہ تاثر مل رہا ہے کہ لاہور میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کی رٹ نہیں ہے۔