ڈی جی آئی ایس پی آر خطابات سے گریز کریں: جاوید ہاشمی

01 اپریل 2018

ملتان (آئی این پی) سینئرسیاستدان مخدوم جاوید ہاشمی نے کہا ہے کہ الیکشن کو ملتوی کرنے والی قوتیں عوامی دبا¶ پر پیچھے ہٹ گئی ہیں، یہ عسکری یا جوڈیشل مارشل لاءکا موسم نہیں ہے۔ چیف جسٹس نے وزیراعظم سے ملاقات کو پیچیدہ بنادیا، باجوہ صاحب کا کام ڈاکٹرائن دینا نہیں، ڈاکٹرائن تو فلاسفروں کی ہوتی ہے۔ اداروں کو سیاسی جماعتیں نہ بنایا جائے۔ ڈی جی آئی ایس پی آر خطابات سے گریز کریں۔ملتان میں بہاﺅ الدین زکریا یونیورسٹی میں زرعی نمائش میں شرکت کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے جاوید ہاشمی نے کہا کہ نادیدہ قوتوں نے ملک کو پانچ جزیروں میں تبدیل کردیا ہے۔نادیدہ قوتیں فوج کو دوسرے مسائل میں الجھانا چاہتی ہیں۔میں فوج سے کہتا ہوں کہ بیرکوں میں جائیں اور سرحدوں کی حفاظت کریں۔ چیف جسٹس خدارا اپنی گفتگو سے اپنے ادارے کے عزت کرائیں، لوڈشیڈنگ ختم کرنے کا دعویٰ جس نے کیا وہ جواب دے۔ جاوید ہاشمی نے کہا کہ فوج کی ڈاکٹرائن کہاں سے آگئی۔
جاوید ہاشمی