الیکشن کے معاملے میں بھی کہیں اسٹے آرڈر نہ آ جائے‘ خورشید شاہ

01 اپریل 2018

سکھر (نامہ نگار) اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی سید خورشید احمد شاہ نے کہا ہے کہ چیف جسٹس اور وزیراعظم کے درمیان ملاقات کی وقت ٹھیک نہیں ہے اگر ملاقات ہو ہی گئی ہے تو پھر اس ملاقات کے بارے میں جو شکوک وشہبات ہیں انہیں دور کرنے کیلئے وزیراعظم ہاؤس وضاحت جاری کرے‘ جمہوریت اور پارلیمنٹ کو چلنے دیا جائے تو چند سالوں میں سب کچھ بہتر ہو جائے گا اور دعا کریں کہ الیکشن کے حوالے سے کوئی اسٹے آرڈر نہ آ جائے۔ تقریب میں شرکت کے موقع پر میڈیا سے بات چیت میں ان کا مزید کہنا تھا کہ وزیر اعظم نے چیئرمین سینیٹ کے حوالے سے جو بات کی ہے وہ غیر جمہوری اور ایک ادارے کی توہین صادق سنجرانی ایک جمہوری عمل میں باوقار طور پر منتخب آئے ہیں اور پھر چیئرمین سینیٹ کوئی بھی ہو اس کا احترام ہونا چاہئے‘ اسحق ڈار ڈاکٹرائن کی وجہ سے ڈالر مہنگا ہوا ہے جس کے معیشت پر بھی اثرات مرتب ہوں گے۔ قبل ازیں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے خورشید شاہ نے کہاکہ ہماری سرزمین پاک سرزمین ہے اور اس کے پرچم کا رنگ بھی سبز ہے‘ وزیراعلیٰ سندھ سے بات ہوئی ہے کہ سکھر میں کم سے کم 11 کلومیٹر تک طویل گرین بیلٹ قائم کیا جائے اور بحیثیت سیاستدان مری لوگوں سے اپیل ہے کہ وہ زیادہ سے زیادہ درخت لگائیں۔
خورشید شاہ