شہر قائد میں غیر قانونی تعمیرات کا سلسلہ جاری ہے

01 اپریل 2018

کراچی (اسٹاف رپورٹر) عدالتی احکامات کے باوجود شہر قائد میں غیر قانونی تعمیرات کا سلسلہ جاری ہے۔ سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے ڈی جی کو متنازعہ بنا دیا گیا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ بعض افسران اپنے گریڈ سے اوپر کے عہدوں پر فرائض انجام دے رہے ہیں جس سے عدالت کے احکامات کی نفی ہو رہی ہے اور سینئر افسران میں مایوسی پائی جاتی ہے۔ ذرائع کے مطابق گلبرگ ٹائون کے متعدد بلاکس میں غیر قانونی تیسری منزلیں ڈالی جا رہی ہیں جبکہ کے ڈی جی سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کو ناکام بنانے کیلئے مختلف افسران نے غیر قانونی تعمیرات مافیا کو کھلی چھوٹ دیدی ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ گلبرگ ٹائون کے علاقے عزیز آباد کے مختلف بلاکس میں غیر قانونی تعمیرات عروج پر ہیں۔ جبکہ ڈی جی کو ان علاقوں میں جاری غیر قانونی تعمیرات سے بے خبر رکھا جا رہا ہے۔ ذرائع کے مطابق ضرورت اس اَمر کی ہے کہ ڈی جی سندھ بلڈنگ اتھارٹی آغا مقصود عباس ازخود ان علاقوں کا دورہ کریں اور خود جا کر دیکھیں کہ کہاں کہاں غیر قانونی تعمیرات ہو رہی ہیں اور ان کا سدباب کریں۔