کے ایم سی سے علیحدگی کے بعد کے ڈی اے کا مالی بحران بڑھ گیا

01 اپریل 2018

کراچی (اسٹاف رپورٹر) بلدیہ عظمیٰ کراچی اور کراچی ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی علیحدگی کے بعد مالی بحران سنگین ہو گیا۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ روٹی‘ کپڑا اور مکان کا نعرہ لگانے والی حکمران جماعت نے دونوں اداروں کو علیحدہ کر کے ان کو تباہ کر دیا ہے جبکہ متعدد کنٹریکٹ ملازمین کے کنٹریکٹ میں توسیع نہ کر کے ان کے گھروں کے چولہے ٹھنڈے کر دئیے جو کہ 10 سال سے کنٹریکٹ پر کام کر رہے تھے۔ ذرائع نے بتایا کہ کے ایم سی میں 200 سے زائد کنٹریکٹ ملازمین اپنے معاہدوں میں توسیع کیلئے مارے مارے پھر رہے ہیں جن کے معاہدوں میں توسیع میئر کراچی وسیم اختر کریں گے۔ کے ایم سی سے علیحدگی کے بعد کے ڈی اے کی آمدنی 20 سے 25 کروڑ ماہانہ سے کم ہو کر چند کروڑ رہ گئی ہے۔ کے ایم ڈی کے پاس بھی تنخواہوں کیلئے پیسے نہیں ہیں۔