عمر رسیدہ افراد کی بھی سنیئے

01 اپریل 2018

مکرمی!میں فوجی پنشنرز بیواو¿ں اور یتیم بچوں اور بزرگ عمر رسیدہ فوجی پنشنرز کی طرف سے وزیراعظم اور وزیر خزانہ کی توجہ دلانیکی جسارت کرتا ہوں جو فوجی پنشنروفات پاگئے ہیں وہ اس عارضی دنیا بیوہ اور دو دو تین تین یتیم بچے چھوڑ کر اس دنیا سے چلے گئے ہیں ۔ آپ خود اندازہ لگاسکتے ہیں کہ اس کمر توڑ مہنگائی میں صرف 5250/- روپے ماہوار پنشن میں گزارا کرنا کس قدر مشکل ہے ماسوائے اس قلیل پنشن کے اور کوئی ذریعہ آمدنی نہیں بیواو¿ں کا کہنا ہے کہ کئی کئی روز فاقوں سے گزر کرتہی لیکن ہم بیوائیں بھوکی سوجاتی ہیں لیکن اپنے یتیم بچوں کو بھوکا نہیں دیکھ سکتیں اس سے بیشتر متعد مرتبہ سابق وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کو یکم اکتوبر 1999 کا جو وعدہ کنونشن سنٹر اسلام آباد میں بزرگوں کے ساتھ کیا تھا اس وعدے کی پاسداری کریں حالانکہ 2013 سے وہ وزیراعظم کی کرسی پر دوبارہ بیٹھے ہیں اور ہر جلسے میں عوام سے مخاطب ہوکر کہتے ہیں کہ ہم نے جو وعدے کئے تھے وہ پورے کردیئے ہیں پی پی حکومت نےءسرکاری ملازمین کی تنخواو¿ں اور پنشن میں ہر بجٹ میں 20 فیصد اضافہ کیا اسی طرح زرداری حکومت نے 5 سال میں تنخواہوں اور پنشن میں 100 فیصد اضافہ کیا مسلم لیگ حکومت نے 5 سال میں 47.50 اضافہ کای وزیر خزانہ محمد اسحاق ڈار نے بجٹ 2015-16 میں اپنی بجٹ تقریر میں کہا تھا کہ10 ہزار سے کم پنشن پانیوالے پنشنرز کی کم از کم پنشن 13000/- روپے کرنیکی تجویز ہے مسلم لیگ ن کا وعدہ اور تجویز ہی رہی سرکاری ملازمین اور پنشنرز نے اعلان کررکھا ہے کہ ہم لوگوں نے کسی پارٹی سے کوئی قرض نہیں لے رکھا اس دفعہ ہم لوگ مرضی کے بیلٹ بکسوں میں ووٹ ڈالیں گے۔
(ملک امیر علی ،چکوال0336-5925668)