اسامہ بن لادن نے خود کو دھماکہ خیز مواد سے اڑایا تھا‘ محافظ کا دعویٰ

قاہرہ (اے این این) مصری اسلامی جہادکے سابق رہنما اور ا±سامہ بن لادن کے محافظ نبیل نعیم عبدالفاتح نے دعویٰ کیاہے کہ ایبٹ آباد میں ا±سامہ بن لادن نے خودکو دھماکہ خیزمواد سے اڑا دیا تھا اور ان کی لاش ریزہ ریزہ ہوگئی تھی، میت کو سمندر میں دفنانے کا امریکی دعویٰٰ جھوٹ پر مبنی ہے۔ ایک عرب اخبارکو انٹرویو میں ا±سامہ بن لادن کے سابق ذاتی محافظ عبدالفاتح نے دعویٰ کیاکہ ایبٹ آبادکمپاو¿نڈ میں ا±سامہ بن لادن کو امریکی کمانڈرز نے گولیوں کا نشانہ نہیں بنایا بلکہ انہوںنے خودکودھماکہ خیزمواد سے اڑا دیا تھا وہ کسی طور پر بھی امریکیوں کے قبضے میں نہیں جانا چاہتے تھے اور ا±سامہ بن لادن نے قسم اٹھارکھی تھی وہ اپنے راز کسی کے ہاتھ نہیں لگنے دیں گے، ا±سامہ گزشتہ دس سال سے ہروقت خودکش جیکٹ پہنے رکھتے تھے ایبٹ آبادکمپاو¿نڈ میں جب امریکی نیوی سیلز داخل ہوئے تو ا±سامہ بن لادن نے ان کے خود تک پہنچنے سے قبل ہی اپنے آپ کودھماکہ خیزمواد سے اڑا دیا تھا اور ان کی نعش ریزہ ریزہ ہوگئی تھی۔میں وقوعہ کے وقت ایبٹ آباد میں نہیں تھالیکن مجھے ا±سامہ کے ایک قریبی عزیزسے پتہ چلاہے اس روزکیا واقعہ ہواتھا۔ یہ ممکن نہیں ہے ا±سامہ بن لادن کے کسی ذاتی محافظ کو خریدا جا سکے کیونکہ ان کے تمام محافظ یمنی یا سعودی تھے جنہیں خریدنا آسان نہیں، تاہم یہ ممکن ہے کہ ان کے کسی حمایتی نے دھوکہ دیا ہو۔
دعویٰ