نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کے درمیان میچ منفرد انداز سے یادگار بن گیا

نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کے درمیان میچ منفرد انداز سے یادگار بن گیا

ایک طرف جنوبی افریقا کے کپتان اے بی ڈی ویلئیرز کے شاندار ایک سو باسٹھ رنز، اور دوسری طرف ویسٹ انڈیز کے کرس گیل کی ڈبل سنچری  شائقین کرکٹ عالمی کپ کے بڑے میچ میں بھی بڑے سکور کی توقع کئے بیٹھے تھے،میزبانوں کے درمیان دنگل ہوا لیکن منفرد اور یادگاردونوں ٹیمیں محض تین سو تین سکور ہی بنا سکیں آسٹریلیا ایک سو اکیاون رنز پر ڈھیر ہو گئی تو نیوزی لینڈ نے بھی کوئی کسر نہ چھوڑی، جو میچ وہ آسانی سے جیت سکتی ہے آسٹریلوی باؤلرز نے اسے مشکل ترین بنا ڈالادونوں اننگز میں انیس وکٹیں گریں،، سو میں سے صرف پچپن اعشاریہ دو اوورز ہی کھیلے گئےدونوں ٹیموں کی باؤلنگ نے ثابت کردیا کہ اگر کارکردگی اچھی ہو تو لڑ کر بھی میچ جیتا یا ہارا جاسکتا ہے