عدالت کا بھارتی کرکٹ بورڈ کے سربراہ سری نواسن کو عہدہ چھوڑنے کا حکم

عدالت کا بھارتی کرکٹ بورڈ کے سربراہ سری نواسن کو عہدہ چھوڑنے کا حکم

نئی دہلی(سپورٹس ڈیسک) بھارتی سپریم کورٹ نے کہا ہے کہ بی سی سی آئی کے سربراہ این سری نواسن آئی پی ایل کرپشن سکینڈل کی شفاف تحقیقات کیلئے اپنا عہدہ چھوڑدیں۔ عدالت نے سری نواسن کوفیصلہ کرنے کیلئے دودن کا وقت دے دیا ہے۔ آئی پی ایل کرپشن کیس کی سماعت بھارتی سپریم کورٹ میں ہوئی۔ بھارتی میڈیا کے مطابق عدالت نے بی سی سی آئی کے وکلاء سے کہا کہ سری نواسن اپنی کرسی سے کیوں چپکے ہوئے ہیں، اگر وہ عہدہ نہیں چھوڑیں گے توہم حکم جاری کردیں گے۔ عدالت کا کہنا تھا کہ جسٹس مدوگل پینل کی آئی پی ایل سکینڈل سے متعلق رپورٹ میں سنگین الزامات ہیں، جب تک بی سی سی آئی کے صدراپنا عہدہ نہیں چھوڑتے اس وقت تک شفاف تحقیقات نہیں ہوسکتیں۔ سپریم کورٹ نے بی سی سی آئی کے وکلاء سے کہا کہ بورڈ میں بہت گند جمع ہوگیا ہے اور صفائی کی اشد ضرورت ہے۔ سپریم کورٹ نے جسٹس مدوگل رپورٹ کومنظرعام پرلانے سے انکارکردیا لیکن بورڈ کے وکیل کو رپورٹ کے کچھ حصے دیکھنے کی اجازت دے دی۔ جسٹس مدوگل رپورٹ کے مطابق چنائے سپرکنگز اور راجستھان رائلز کے مالکان کرپشن میں ملوث ہیں۔ سری نواسن کے داماد گروناتھ میاپن چنائے سپرکنگز کے مالک ہیں۔