بھارت ‘ آئی سی سی‘ انڈین پریمپئر لیگ کا ”گند“ پاکستان پر ڈالنے لگے‘ سابق کرکٹرز کی شدید تنقید

بھارت ‘ آئی سی سی‘ انڈین پریمپئر لیگ کا ”گند“ پاکستان پر ڈالنے لگے‘ سابق کرکٹرز کی شدید تنقید

 لاہور (سپورٹس رپورٹر) سابق ٹیسٹ کرکٹرز نے میچ فکسنگ کی روک تھام میں ناکامی پر آئی سی سی اور آئی پی ایل کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ کہ دونوں نے سپاٹ فکسنگ کو روکنے کیلئے موثر اقدامات نہیں کئے۔ ایک انٹرویو میں سابق کپتان عامر سہیل نے کہا کہ اسد رﺅف کیخلاف عائد کیے جانیوالے الزامات کا ثبوت سامنے آنا چاہئے، یہ امر افسوسناک ہے کہ سپاٹ فکسنگ آئی پی ایل،میچ ریفریز اور اینٹی کرپشن آفیشلزکے سامنے ہو رہی ہے، ان سب کو کیوں سزا نہیں دی جا رہی؟ انہوں نے مطالبہ کیا کہ پولیس کرکٹرز، بکیز اور آفیشلز کے درمیان روابط کو بے نقاب کرے۔ سابق فاسٹ بولر سرفراز نواز نے کہا کہ آئی سی سی کے اینٹی کرپشن یونٹ کو مستعفی ہو جانا چاہئے۔ انہوں نے راجیو شکلا کی زیر سربراہی آئی پی ایل کمیٹی سے اخلاقی بنیادوں پر استعفیٰ دینے کا مطالبہ کیا۔ سابق کپتان رمیز راجہ نے کہا کہ کرپشن کیسز میں آئی سی سی نے عدم برداشت کی پالیسی اپنائی ہے، اسد رﺅف پر چونکہ الزام لگ چکا اس لئے مزید کسی تنازع سے بچنے کیلئے انہیں چیمپئنز ٹرافی کے امپائرز پینل سے ہٹایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ جب کبھی کرکٹ کی ساکھ بحال ہونے لگے کوئی نہ کوئی تنازع سامنے آ جاتا ہے، اب بھی ایسا ہی ہوا، کھیل سے کرپشن ختم کرنے کیلئے سخت اقدامات کی ضرورت ہے۔