نوجوان بلے باز چیلنج قبول کرنے لگے، سیریز جیتنے کے لئے کارکردگی برقرار رکھنا ہو گی:مصباح الحق

نوجوان بلے باز چیلنج قبول کرنے لگے، سیریز جیتنے کے لئے کارکردگی برقرار رکھنا ہو گی:مصباح الحق

کولمبو (سپورٹس ڈیسک) پاکستان اور سری لنکا کے مابین 3ٹیسٹ میچوں کی سیریز کا دوسرا ٹیسٹ کل سے کولمبومیںشروع ہو گا۔سر۔قومی ٹیم کولمبو پہنچ گئی اور کھلاڑیوں نے کوچز کی زیر نگرانی سخت ٹریننگ کی ۔سپن کوچ مشتاق احمد نے یاسر شاہ اور ذولفقار بابر کو سخت ٹریننگ کروائی ۔ کپتان مصباح الحق کا کہنا ہے کہ گال میں یاسر شاہ نے کمال کردکھایا، سلو بولرز کو بہترانداز میں کھیلنے والے آئی لینڈرزکا ہوم گراؤنڈ پر شکار بڑا کارنامہ ہے، نوجوان بیٹسمین بھی چیلنج قبول کرنے لگے ہیں، سیریز جیتنے کیلیے کارکردگی میں تسلسل برقرار رکھنا ہوگا۔یاسر شاہ کے کیریئرکا ابھی آغاز ہے،اس نے چیلنج قبول کرتے ہوئے پاکستانی فتح میں بنیادی کردار ادا کیا، سپن بولنگ کو بہتر کھیلنے والی ٹیموں میں شمار ہونے والے سری لنکاکے ہوم گراؤنڈ پر 7وکٹیں حاصل کرنا واقعی بڑا کارنامہ ہے،البتہ لیگ سپنر کو عظیم بولرز کی صف میں جگہ بنانے کیلئے بڑی محنت درکار ہوگی،امید ہے کہ اگلے دونوں ٹیسٹ میں بھی وہ اہم کردار ادا کریں گے، انھیں ایشین کنڈیشنز کے ساتھ انگلینڈ اور آسٹریلیا میں بھی عمدہ کارکردگی دکھانے کا ہنر سیکھنا ہوگا۔ سرفراز، اسد شفیق اور اظہر علی جیسے نوجوان بیٹسمین بھی اب ذمہ داری اٹھانے اور چیلنج قبول کرنے لگے ہیں لیکن سیریز جیتنے کیلیے کارکردگی کا تسلسل برقرار رکھنا ہوگا۔ جنید خان انجری کے بعد واپس آئے ہیں،انھیں ردھم میں آنے میں وقت لگے گا، پیسر کی صلاحیتوں پر اعتماد برقرار ہے تاہم کولمبو ٹیسٹ سے قبل دیکھیں گے کہ تکنیکی طور پر ہمارے پلان میں ان کی ٹیم میں جگہ بنتی ہے یا نہیں۔قومی ٹیم 9سال بعد سری لنکا میں ٹیسٹ سیریز جیتنے کیلئے پر عزم ہے۔