ویسٹ انڈیز کیخلاف میچ میں قومی ٹیم پریشر میں ہو گی‘ کوارٹر فائنل آسان نہ لے : جاوید میانداد

لاہور (اے پی پی) دنیائے کرکٹ کے مایہ ناز بلے باز اور پاکستان کرکٹ بورڈ کے ڈائریکٹر جنرل جاوید میانداد نے کہا ہے کہ پاکستان کرکٹ ٹیم کا ورلڈ کپ میں کوارٹر فائنل قدرے کمزور ٹیم ویسٹ انڈیز سے ہونا قومی ٹیم کے حق میں ہے لیکن ویسٹ انڈیز کو آسان لینا نقصان دہ ثابت ہو سکتا ہے۔ ایک گفتگو میں انہوں نے کہا کہ قومی ٹیم کو یہ نہیں دیکھنا چاہئے کہ سامنے کمزور ٹیم ہے یا مضبوط ٹیم، انہیں صرف اپنی پرفارمنس کی طرف توجہ دینی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ ون ڈے میں دو تین بلے باز یا باﺅلر میچ کو جتوانے میں اہم کردار ادا کردیتے ہیں اسلئے کسی بھی ٹیم کو کمزور سمجھنا بہت بڑی غلطی ہے۔ پاکستان اور ویسٹ انڈیز کے میچ میں پاکستانی ٹیم پر زیادہ پریشر ہوگا کیونکہ سامنے ٹیم مضبوط نہ ہو تو اس سے ہر صورت میں جیتنے کا پریشر ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی ٹیم کو ورلڈ کپ کا کوارٹر فائنل جیتنے کا اچھا موقع ملا ہے اور اس سے فائدہ اٹھانا چاہئے۔ ٹیم کو میچ پر فوکس کرنا چاہئے، ورلڈ کپ جیتنے کیلئے کوئی بھی غلطی افورڈ نہیں کی جاسکتی۔ بلے بازوں اور باﺅلروں کو سچویشن کے مطابق کھیلنا چاہئے وکٹ اور مخالف ٹیم کو دیکھ کر کمبی نیشن بنانا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ بنگلہ دیش کی وکٹ پاکستان کےلئے موزوں ہوگی۔ جاوید میانداد نے بتایا کہ فاسٹ باﺅلر شعیب اختر کا ریٹائرمنٹ کا فیصلہ ٹھیک ہے شعیب جس پائے کا باﺅلر تھا اسے بہت زیادہ پرفارم کرنا چاہئے تھا میری ذاتی رائے میں اس سے جو توفعات تھیں وہ پوری نہیں ہوسکی تاہم شعیب اختر کو گڈ لک کہتا ہوں۔