ون ڈے سیریز میں بنگلہ دیش سے شکست سقوط ڈھاکہ ہے‘ پی سی بی میں تبدیلیاں کی جائیں: سابق کرکٹرز

ون ڈے سیریز میں بنگلہ دیش سے شکست سقوط ڈھاکہ ہے‘ پی سی بی میں تبدیلیاں کی جائیں: سابق کرکٹرز

لاہور ( سپورٹس رپورٹر/ نمائندہ سپورٹس) سابق کرکٹرز نے بنگلہ دیش کے ہاتھوں ون ڈے سیریز میں قومی ٹیم کی شکست کو پاکستان کرکٹ کیلئے سقوط ڈھاکہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ اب وقت آگیا کہ قومی ٹیم کو چھوڑ کر پاکستان کرکٹ بورڈ میں تبدیلیاں کی جائیں۔ سابق کپتان محمد یوسف نے کہا کہ کرکٹ بورڈ میں سالہا سال سے پرکشش مراعات کو انجوائے کرنے والے لوگ ان عہدوں کے اہل نہیں۔ سابق چیف سلیکٹر معین خان کے بھائی ندیم خان نے کہا کہ کھلاڑی ٹیم کی بجائے اپنی انفرادی کارکردگی کیلئے کھیلتے ہیں۔سابق کپتان راشد لطیف نے کہا جب تک پرچی سسٹم کا خاتمہ نہیں ہوتا ہماری کرکٹ کے درست ہونے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔سابق چیف سلیکٹر محمد الیاس نے کہا وقار یونس من مانی کرنے کے شوقین ہیں، انہیں جب کسی اور جگہ کام نہیں ملتا تو پاکستان یاد آ جاتا ہے۔ فواد عالم کو کس بنیاد پر ٹیم میں شامل کیا گیا۔ ایک کھلاڑی کو صرف ایک سینچری کی بنیاد پر قومی ٹیم میں شامل کر لیا گیا۔ اظہر علی کو مڈل آرڈر میں کھیلنا چاہئے۔ انہوں نے کہا بنگلہ دیش سے ون ڈے سیریز میں ناکامی سے بہتری کے دعوؤں کی نفی ہوتی ہے۔ نیشنل کرکٹ اکیڈمی کے سینئر جنرل منیجر علی ضیا نے کہا کہ کوچ میچ سے پہلے اور بعد میں چیزوں کا ذمہ دار ہو سکتا ہے۔