مجوزہ پلان پر پیش رفت نہ ہو سکی، پاکستان میں ٹی20 سپرلیگ کا انعقاد خطرے میں پڑ گیا

مجوزہ پلان پر پیش رفت نہ ہو سکی، پاکستان میں ٹی20  سپرلیگ کا انعقاد خطرے میں پڑ گیا

لاہور (این این آئی)پاکستان کرکٹ بورڈ پاکستان سپرلیگ ٹی ٹوئنٹی کے مجوزہ پلان پر مثبت پیش رفت نہیں کرسکا ۔ پی سی بی کے ذمے دار ذرائع نے بتایا کہ پی سی بی کے معاملات عدالت میں زیر سماعت ہیں حالانکہ حکومت نے نجم سیٹھی اور ان کی انتظامی ٹیم کو چار ماہ کی توسیع دے دی ہے تاہم غیر یقینی کی اس صورتحال میں پاکستان سپر لیگ کرانے کی کوششیں دم توڑ رہی ہیں۔ منصوبے پر پاکستان کرکٹ بورڈ پہلے ہی کروڑوں روپے خرچ کرچکا اور لاہور کے قذافی اسٹیڈیم کے ایک پریس باکس کو پاکستان سپر لیگ کے سیکرٹریٹ میں تبدیل کردیا گیا ہے جہاں پہلے ہی اسٹاف کام کررہا ہے۔ چند ہفتے قبل پاکستان کرکٹ بورڈ کیچیئرمین نجم سیٹھی نے ڈھاکا میں پاکستانی صحافیوں کو بتایا تھا کہ آئندہ سال جنوری میں ورلڈ کپ سے قبل دو ہفتے کی ونڈو کے دوران لیگ کرائی جائے گی۔ جس کا فائنل لاہور میں کرانے اور آئی پی ایل طرز پر ٹیموں اور ٹورنامنٹ کے انتظامات آئوٹ سورس کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔ ذرائع کے مطابق لاہور میں فائنل کرانے کے امکانات ختم ہوگئے ہیں۔ تاہم وقت گذرنے کے باوجود ابھی تک ٹینڈر جاری نہیں کئے گئے ہیں اور نہ ہی اس حوالے سے پی سی بی ہیڈ کوارٹر میں کوئی پیش رفت دکھائی دے رہی ہے۔ ذرائع کے مطابق ٹورنامنٹ کرانے کے لئے امریکا سے آئے ہوئے ڈائریکٹر بدر رفاعی کو پی سی بی میں ڈائر یکٹر مارکیٹنگ بنادیا گیا جبکہ منصوبے کے دو اہم کردار سلمان سرور بٹ اور جاوید میاں داد نے پی سی بی کو خیرباد کہہ دیا ہے۔ بظاہر ایسا دکھائی دے رہا ہے کہ پی سی بی میں نئے سیٹ اپ کے آنے کے بعد اور ورلڈ کپ کے بعد اس منصوبے پر مزید کام ہوگا۔