میچ فکسنگ میں سزا یافتہ معین خان قومی کرکٹ ٹیم کے چیف سلیکٹر تعینات

میچ فکسنگ میں سزا یافتہ معین خان قومی کرکٹ ٹیم کے چیف سلیکٹر تعینات

لاہور (سپورٹس رپورٹر) پاکستان کرکٹ بورڈ کے عبوری چیئرمین نجم سیٹھی نے میچ فکسنگ میں جرمانے کی سزا پانے والے قومی ٹیم کے سابق کپتان معین خان کو اقبال قاسم کی جگہ چیف سلیکٹر مقرر کر دیا جبکہ سابقہ سلیکشن کمیٹی کے دیگر ارکان جن میں سلیم جعفر، اظہر خان اور فرخ زمان شامل ہیں معین خان کے ساتھ نئے احکامات تک کام کرتے رہیں گے۔ نئے چیف سلیکٹر معین خان نے عبوری چیئرمین نجم سیٹھی کے ساتھ ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں نے عہدہ چیلنج سمجھ کر قبول کیا۔ ورلڈکپ 2015ءکیلئے مضبوط سکواڈ کی تشکیل اولین ٹاسک ہوگا، ڈومیسٹک کرکٹ میں اچھا پرفارم کرنے والوں کو بھرپور موقع دیا جائے گا۔ پی سی بی کی پالیسی کے مطابق ہار اور جیت کی ذمے داری قبول کروں گا۔ سلیکشن کے حوالہ سے میرے ذہن میں بہت سے منصوبے ہیں جن پر عمل کرنے میں وقت درکار ہوگا۔ بورڈ نے میرا تقرر غیر معینہ مدت کے لئے کیا ہے میں نے بھی اس پرکوئی اصرار نہیں کیا بطور چیف سلیکٹر بورڈ سے کوئی معاوضہ بھی نہیں لوں گا۔ انہوں نے کہا کہ میں کسی ایک شہر نہیں بلکہ پورے پاکستان کا چیف سلیکٹر ہوں لہذا میرے لیے تمام برابر ہیں۔ کوٹہ سسٹم پر یقین نہیں رکھتا جو کھلاڑی ٹیم کیلئے بہتر ہوگا اسے بھرپور موقع دیا جائے گا۔ چیف سلیکٹر نے کہا کہ ماضی کی طرح کھلاڑیوں کے بیک اپ تیار کرنے کی بھی کوشش کریں گے تاکہ جونیئر اپنے سینئر سے سیکھ کر پاکستان کی خدمت کرسکیں۔ انہو ں نے کہاکہ انڈر 23 ٹیم کا اعلان تین چارروز میں کریں گے جس کیلئے سلیکشن کمیٹی کا اجلاس جلد طلب کیا جائے گا۔ واضح رہے کہ سلیکشن کمیٹی کے نئے چیئرمین معین خان نے 69ٹیسٹ اور 219 ایک روزہ میچوں میں پاکستان کی نمائندگی کی۔ معین خان کا شمار پاکستان کے نمایاں وکٹ کیپرز میں ہوتا ہے، ٹیسٹ میچوں میں انہوں نے 128کیچز اور 20 سٹمپ ایک روزہ میچوں میں 214کیچ اور 73 سٹمپ کئے۔ 1999ءورلڈکپ میں ٹیم کی شکست کے بعد میچ فکسنگ کی انکوائری کر نے والے جسٹس قیوم کمشن نے جن کھلاڑیوں کو جرمانے کئے ان میں معین خان بھی شامل تھے۔