ٹیم متحد ہو کر کھیلے تو جیتنے سے کوئی نہیں روک سکتا : انضمام الحق

ٹیم متحد ہو کر کھیلے تو جیتنے سے کوئی نہیں روک سکتا : انضمام الحق


لاہور (کامرس رپورٹر) قومی کرکٹ ٹیم کے بیٹنگ کنسلٹنٹ انضمام الحق نے کہا ہے کہ ٹی ٹوئنٹی اور ون ڈے کرکٹ میں کس ٹیم کو فیورٹ قرار دینا مشکل ہے لیکن پاکستان کا باﺅلنگ اٹیک بہترین ہے اور وہ بھارت کی ٹیم پر دباﺅ ڈال سکتا ہے۔ ہفتہ روز قذافی سٹیڈیم لاہور میں جی ایم میڈیا ندیم سرور اور منیجر رضا راشد کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بھارت کی ٹیم بھی کمزور نہیں ہے اور وہ کم بیک کرنے کی پوری صلاحیت رکھتی ہے، پاکستان کی ٹیم کو کامیابی کے لئے اٹیکنگ کرکٹ کھیلنا ہوگی۔ انہوں نے کہاکہ بھارت کی کنڈیشنڈ میں قومی ٹیم کے متعدد کھلاڑی کھیلنے کا تجربہ رکھتے ہیں تاہم دونوں ٹیموں کے مابین میچ میں جو ٹیم پریشر کو ہینڈل کرے گی اور اچھا گیم پلان بنائے گی وہ فائدہ اٹھائے گی۔ انہوں نے کہاکہ قومی ٹیم کی کوچنگ کا تجربہ میرے لئے نیا ہے ،پہلے بطور کھلاڑی ٹیم میں تھا اور اب بطور بیٹنگ کنسلٹنٹ ٹیم کے ساتھ ہوں۔کوشش کروں گا کہ اپنے تجربہ کی مدد سے کھلاڑیوں کو گائیڈ کر سکوں۔ مڈل آرڈر اور لوئر آرڈر بلے بازوں کو بتاﺅ کہ انہوں نے ٹارگٹ کو کیسے حاصل کرنا ہے اور ان کی ذمہ داریاں کیا ہیں۔ انضمام الحق نے کہاکہ کھلاڑیوں کی تکنیک کو بہتر ڈومیسٹک کرکٹ میں کوچنگ کرکے بنایا جا سکتا ہے۔ تاہم قومی ٹیم کے کھلاڑیوں کو گیم پلان کے بارے میں بتاﺅں گا۔ انہوں نے کہاکہ قومی ٹیم میں کئی کھلاڑی ایسے ہیں جنہوں نے اپنی انفرادی کارکردگی سے پاکستان کو جتوایا لیکن ضرورت اس امر کی ہے کہ وہ بطور ٹیم کھیلا جائے۔ انہوں نے کہا کہ قومی ٹیم کے کھلاڑیوں کو جتنی زیادہ کرکٹ کھیلنے کو ملے گی ان کی پرفارمنس اتنی ہی بہتر ہو جائے گی۔ ٹی ٹونٹی کرکٹ میں تکنیک کا عمل دخل نہیں ہوتا بلکہ اچھی بال پر بھی زیادہ سے زیادہ سکور بنانا ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ قومی ٹیم دس سے بارہ ٹیسٹ میچز کھیل لے گی تو اس کے بلے بازوں کی تکنیک بہتر ہو جائے گی۔ کھلاڑی بھارت کیخلاف سیریز جیتنے کے لئے کافی پُراعتماد ہیں۔