قوت بخش ادویات کی روک تھام ایتھلیٹس کے جسم پر مائیکرو چپ نصب کرنے کا فیصلہ

لندن (آن لائن)ورلڈ اولمپیئنز ایسوسی ایشن کے چیف ایگزیکٹیو مائک ملر کا کہنا ہے کہ وہ ذاتی حیثیت میں ایتھلیٹس کے جسم میں مائیکرو چپس نصب کرنے کے حق میں ہیں تاکہ قوت بخش ادویات کے استعمال کو روکا جا سکے۔مائک ملر کا کہنا ہے کہ مائیکرو چپس کو جسم کے اندر نصب کرنے سے معلوم ہو سکے گا کہ ممنوعہ ادویات کھیلوں کے دوران کارکردگی پر کس طرح اثرانداز ہوتی ہیں اور اسے کس حد تک بڑھاتی ہیں۔لیکن برطانیہ میں قوت بخش ادویات کی روک تھام کے ادارے کی سربراہ نکول سیپسٹڈ کہتی ہیں کہ انھیں ڈر ہے کہ یہ قدم ذاتی زندگی میں مداخلت ہو گی اور اس میں دھوکہ دہی کا اندیشہ رہے گا۔مائک ملر نے دعوی کیا ہے کہ قوت بخش ادویات کی روک تھام کے لیے انتہا پسندانہ طریقے اختیار کرنے ہوں گے، بشمول چپس کا نصب کیا جانا، تاکہ شفاف کھیل کو فروغ دیا جا سکے۔مائک ملر سمجھتے ہیں کہ مائیکرو چپس نصب کرنے سے ٹیکنالوجی کو دھوکہ دینے کا مسئلہ حل ہو جائے گاان کا کہناہے کہ 'چند لوگ کہتے ہیں کہ ہمیں ایسا نہیں کرنا چاہیے، ہم کتوں سے محبت کرنے والی قوم ہیں، ہم اپنے کتوں میں چپ نصب کراتے ہیں کیونکہ ایسا نہیں لگتا کہ اس سے انھیں نقصان پہنچے گا تو پھر ہم اپنے آپ میں کیوں چپ نصب کرانے کے لیے تیار نہیں؟'مائک ملر نے دعوی کیا ہے کہ مائیکرو چپ ٹیکنالوجی میں پیش رفت افق پر ہے اور اس کی جانچ کرنے والوں کو پیش رفت سے آگاہ ہونا ضروری ہے۔انھیں اس بات کا ڈر ہے کہ دھوکہ دینے والے اپنا راز فاش ہونے سے بچنے کے لیے خود نگرانی کر کے اس ٹیکنالوجی کا استحصال کر سکتے ہیں۔مائک ملر سمجھتے ہیں کہ'مائیکرو چپس نصب کرنے سے ٹیکنالوجی کو دھوکہ دینے کا مسئلہ حل ہو جائے گا کیونکہ لوگوں کو کسی آلے پر قابو نہیں ہے۔