پی ایف ایف کی معطلی ‘پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کا ہنگامی اجلاس طلب

پی ایف ایف کی معطلی ‘پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن  کا ہنگامی اجلاس طلب

لاہور(سپورٹس رپورٹر) فیفا کی جانب سے پاکستان کی رکنیت معطلی کے بعد پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن  نے جنرل کونسل کا ہنگامی اجلاس پیر کو طلب کر لیا ہے۔ فیفا کی جانب سے پاکستان کی رکنیت کی معطلی کے بعد کی صورتحال پر جائزہ لیا جائے گا۔وفاقی وزیر بین الصوبائی رابطہ میاں ریاض حسین پیرزادہ کی زیر صدارت منعقد ہوا۔ انہوں نے نے ہدایت دی کہ فٹبال کی ترقی اور کھلاڑیوں کے تحفظ کے لیے شرمناک صورتحال کو حل کرنے کے لیے مربوط حکمت عملی ترتیب دی جائے۔تا کہ اس مسئلہ سے مستقل طور پر نمٹا جا سکے۔ذرائع کے مطابق فیفا معطلی کے بعد فٹبال کا کھیل نیشنل گیمز سے بھی باہر ہونے کا امکان بڑھ گیا ہے کیونکہ پی او اے کے پاس فیفا کا حکم ماننے کے علاوہ کوئی چارہ نہیں ہے کیونکہ فیفا کی جانب سے پابندی عائد کی گئی ہے تاہم پی او اے نے جائزہ لینا ہے کہ لوکل سطح پر ہونیوالے ایونٹ میں فٹبال کا کھیل شامل اگر کیا جائے تو اس کی اجازت ہوگی یا نہیں۔ نیشنل گیمزنومبر کے وسط میں اسلام آباد میں شیڈول ہے۔ فٹبال کی عالمی تنظیم کی جانب سے پاکستان فٹبال کی رکنیت معطل کیے جانے کے بعد پاکستان سپورٹس بورڈ کا ہنگامی اجلاس گذشتہ روز ۔ اجلاس میں امجد علی خان سیکرٹری وزارت بین الصوبائی رابطہ، ڈاکٹر اختر نواز گنجیرا، ڈائریکٹر جنرل پاکستان سپو رٹس بورڈ، فیاض الحق ڈپٹی سیکرٹری وزارت بین الصوبائی رابطہ اور عرفان اللہ خان، لیگل ایڈوائزر نے شرکت کی۔ اجلاس میں فیفا کی طرف سے جاری کردہ نوٹیفیکیشن پر تفصیلی بحث کی گئی اور اس کے متعلق دستیاب قانونی پہلوﺅں پر غور کیا گیا۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ یہ صورت حال پاکستان فٹبال فیڈریشن میں موجود دو گروپوں کے درمیان لڑائی کی وجہ سے سامنے آئی اور فیڈریشن کے عدم تعاون کے باعث فیڈریشن کا کسی قسم کا آڈٹ نہیں کرایا گیا۔ مزید کہا کہ اس معاملہ کو حل کرنے کے لیے ملکی و غیر ملکی قانون کو سامنے رکھتے ہوئے متعلقہ لوگوں کی مشاورت سے پائیدار حل تلاش کیا جائے۔ حکومت اس بات کو بھی یقینی بنائے گی کہ موجودہ حالات سے عام فٹبالرز کو نقصان نہ ہو اور فٹبال کی بہتری کے لیے پائیدار حل نکالا جائے۔