سعید اجمل کا بائولنگ ٹیسٹ فروری میں ہو گا، کلیئرنس ملنے پر ورلڈ کپ کھیلیں گے: شہریار

سعید اجمل کا بائولنگ ٹیسٹ فروری میں ہو گا، کلیئرنس ملنے پر ورلڈ کپ کھیلیں گے: شہریار

لاہور+کراچی (نمائندہ سپورٹس+سپورٹس رپورٹر) پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئر مین شہر یار خان نے کہا ہے کہ قومی ٹیم کو ورلڈکپ کیلئے انفرادی کھیل کی ضرورت نہیںہے بلکہ کھلاڑیوں کو ایک ٹیم میں ڈھل کر کھیلنے کی ضرورت ہے اگر قومی ٹیم یکجان ہو کر کھیلے تو ورلڈکپ جیت سکتی ہے ۔سعید اجمل اور محمد حفیظ کے بالنگ ایکشن کے فارمل ٹیسٹ کیلئے انٹر نیشنل کرکٹ کونسل سے درخواست کر دی ہے۔ محمد حفیظ کا بائیو مکینک ٹیسٹ رواں ماہ جبکہ سعید اجمل کا اگلے ماہ ہوگا،مصباح الحق مکمل فٹ اور ورلڈ کپ میں ٹیم کی قیادت کیلئے تیار ہیں۔ ضرورت پڑنے پر کوئی بھی سینئر کھلاڑی قومی ٹیم کی قیادت کر سکتا ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے پینٹگولر کپ کی ٹرافی کی تقریب رونمائی سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ فواد عالم کو سکواڈ میں شامل نہ کرنے کا فیصلہ سلیکٹرز کا تھا۔ پینٹگولر کپ میں پانچ ٹیموں کے کھیلنے سے کوالٹی کرکٹ ہوئی اور کھلاڑیوں کو اپنی صلاحتیں کھل کر دکھانے کا بھر پور موقع ملا۔خیبر پختونخواہ کی ٹیم میں بہت کم سٹار کھلاڑی ہیں لیکن ان کی پرفارمنس انتہائی شاندار رہی ‘ وہ فیورٹ ٹیم ہے۔ا مشکوک بولنگ ایکشن کے حامل بولرز کے ایکشن کی درستگی کیلئے کام ہو رہا ہے‘لاہور میں پاکستان کی پہلی بائیو مکینک لیبارٹری فعال کی جا رہی ہے جو جولائی میں کام کرنا شروع کر دے گی۔ مصباح ورلڈکپ میں فٹنس مسائل سے دو چار ہوئے تو شاہد آفریدی ،یونس خان یاکسی اور سینئر کھلاڑی کو قیادت کی ذمے داری سوپنی جاسکتی ہے۔ محمد حفیظ نے بالنگ ایکشن کی معنمولی سی خامی کوبہت حد تک درست کر لیا ہے‘آئی سی سی سے فارمل بائیو مکینک ٹیسٹ کی درخواست کی ہے اور کہا ہے کہ محمد حفیظ کا ٹیسٹ رواں ماہ کہیں بھی لیا جا سکتا ہے۔محمد حفیظ کاکہنا ہے کہ وہ اس کمزوری پر قابو پالیں گے وہ آفیشل ٹیسٹ کیلئے مکمل تیار ہیں۔ اسی طرح باہمی مشاورت کے بعد سعید اجمل کے بائیو مکینک ٹیسٹ کے لئے بھی آئی سی سی سے درخواست کر دی ہے ۔ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ کی سفارشات انٹر نیشنل کرکٹ کونسل نے اینٹی کرپشن یونٹ کو ارسال کر دیں ،محمد عامر کو نئے قوانین کے مطابق ملنے والی رعایت کا فیصلہ آئی سی سی کا ای سی یونٹ کر ے گا ۔