چولستان جیپ ریلی کے لئے 100 ڈرائیورز کی رجسٹریشن ‘ خاتون بھی شامل

چولستان جیپ ریلی کے لئے 100  ڈرائیورز کی رجسٹریشن ‘ خاتون بھی شامل

لاہور(سپورٹس رپورٹر ) پنجاب یوتھ فیسٹیول کی طرح چولستان جیپ ریلی بھی دنیا میں پاکستان کا سوفٹ امیج بہتر بنانے میں معاون ثابت ہوگی جس کی تمام تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں۔ چولستان جیپ ریلی 14 سے 16 فروری تک منعقد ہوگی، ریلی میں حصہ لینے کے لیے 100 ڈرائیورز نے رجسٹریشن کرا دی ہے جس میں ایک خاتون ڈرائیور بھی شامل ہیں۔ ان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر کھیل و سیاحت رانا مشہود احمد خان نے صوبائی ٹورازم کے دفتر میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ایم ڈی ٹورازم حبیب الرحمان گیلانی بھی موجود تھے۔ رانا مشہود احمد کا کہنا تھا کہ سپورٹس کی طرح سیاحت بھی انڈسٹری کا روپ دہار چکی ہے جو پاکستان کی ترقی میں اپنا کردار ادا کر رہی ہے۔ پاکستان کو آگے لے جانے کے لیے گراس روٹ لیول پر کام کیا جا رہا ہے۔ وزیر اعلٰی پنجاب کے ویژن کے تحت نوجوانوں کو کھیلوں کے زیادہ سے زیادہ مواقع فراہم کیے جا رہے ہیں۔ چولستان میں منعقد ہونے والی جیپ ریلی کو دیکھنے کے لیے ایک لاکھ افراد وہاں موجود ہونگے اس دوران وہاں پر کلچرل پروگرام کا بھی انعقاد کیا جائے گا جو وہاں کی ثقافت کی عکاسی کرینگے۔ سعودی پرنس نے بھی اپنے دورہ پاکستان میں مری، اسلام آباد، راولپنڈی اور لاہور کا دورہ کیا، انہوں نے پاکستان ٹورازم کے ماحول کو بہت زیادہ سراہا۔ چولستان جیپ ریلی کے لیے 100 سے زائد ڈرائیورز نے رجسٹریشن کرائی ہے اور پہلا موقع پر ہے کہ کوئی خاتون ڈرائیور بھی ریس میں شریک ہو رہی ہے ہماری کوشش ہوگی کہ اگلے سال ریلی میں خواتین ڈرائیورز کی تعداد میں اضافہ ہو۔ رانا مشہود احمد کا کہنا تھا کہ چولستان جیپ ریلی بین الاقوامی ڈیکار ریلی کا روپ دھار چکی ہے۔ ہماری پوری کوشش ہوگی کہ چولستان جیپ ریلی میں بین الاقوامی ڈرائیورز بھی شریک ہوں۔ ریلی کے لیے 25 لاکھ روپے کی انعامی رقم مختص کی گئی ہے جبکہ فاتح ڈرائیور کو دو لاکھ روپے نقد انعام دیا جائے گا۔ پنجاب حکومت کے زیر اہتمام منعقد ہونے والے یوتھ فیسٹیول میں 40 سے زائد انٹرنیشنل ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں جس سے پاکستان کا سوفٹ امیج دنیا میں متعارف ہوگا۔ ان کا کہنا تھا کہ بعض ناگزیر وجوہات کی بنا پر اس سال چھانگا مانگا میں بسنت کے ایونٹ کا انعقاد نہیں ہونے جا رہا ہے تاہم ہم قانون سازی کر رہے ہیں کہ اگلے سال بسنت کے ایونٹ کو لاہور میں ہی کرایا جائے گا۔  آخر میں ایم ڈی ٹورازم حبیب الرحمان گیلانی نے ریلی کے سپانسر کا شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے ایک بڑے ایونٹ کے لیے اپنا تعاون کیا۔  ان کا کہنا تھا کہ ریلی کے موقع پر اونٹ ڈانس، لوکل فوک ڈانس سمیت علاقائی ثقافت کو متعارف کرنے کے لیے سٹالز لگائے جائیں گے۔