دھونی کو غلط مین آف میچ قرار دینے پر بھارتی میڈیا نے بورڈ کا بھانڈا پوڑ دیا

دھونی کو غلط مین آف میچ قرار دینے پر بھارتی میڈیا نے بورڈ کا بھانڈا پوڑ دیا


نئی دہلی (نیوز ایجنسیاں)پہلے ایک روزہ میچ میں بھارتی کپتان ایم ایس دھونی کو مین آف دی میچ قرار دینے کے تنازعے کی گرد ابھی بیٹھنے بھی نہ پائی تھی کہ تیسرے ایک روزہ میچ میں پاکستان کے خلاف دھونی کے مرد میدان کا اعزاز پانے کی پس پردہ کہانی بھارتی اخبار سامنے لے آیا۔ بھارتی اخبار نے گھر کا بھیدی لنکا ڈھائے کے مصداق دھونی کو مین آف دی میچ ایوارڈ دیئے جانے کے پس پردہ کہانی کا بھانڈہ پھوڑ دیا۔ اخبار کے مطابق اعزاز کے لئے تشکیل کردہ جیوری میں شامل ایک سابق بھارتی کرکٹر نے بتایا کہ انہیں ایسا کرنے کے لئے بھارتی کرکٹ بورڈ کی جانب سے ہدایات دی گئی تھیں جس کا مقصد دھونی پر دبا ﺅکا خاتمہ تھا۔ دھونی نے میچ میں سکور کئے صرف چھتیس رنز جبکہ ایک کیچ بھی گرایا اپنے ہم منصب مصباح کا لیکن ان کی اس کارکردگی کو پس پشت ڈالتے ہوئے انہیں میچ کا بہترین کھلاڑی قراردے دیا گیا۔پہلے ایک روزہ میچ میں ناصر جمشید کی بجائے دھونی کو مین آف دی میچ ایوارڈ دیئے جانے پر پاکستان ٹیم مینجمنٹ کی جانب سے کسی صدائے احتجاج کے بلند نہ ہونے ہر بھارتی کرکٹ بورڈ نے اعزازات کی بندر بانٹ میں نیا ریکارڈ قائم کردیا۔ اپنے چہیتے اور آنکھوں کے تارے دھونی کو تین میچز کی سیریز میں دو بار مین آف دی میچ کا ایوارڈ دلانے والے بھارتی کرکٹ بورڈ نے کھیل کی روح کے منافی قدم اٹھاکر سعید اجمل کا حق مارا لیکن سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ دورے پر اٹھائیس رکنی پاکستان سکواڈ میں شامل گیارہ آفیشلز نے بھارتی مہمان نوازی سے لطف اندوز ہونے کے ساتھ اپنے کھلاڑیوں کی حق تلفی پرخاموشی کیوں اختیار کی۔