کامیابی کیلئے تینوں شعبوں میں محنت کرنا ہو گی: مصباح الحق

کامیابی کیلئے تینوں شعبوں میں محنت کرنا ہو گی: مصباح الحق

میرپور (سپورٹس ڈیسک )پاکستانی کرکٹ ٹیم کو بنگلہ دیش سے خالی ہاتھ نہ آنے کا آخری موقع دوسرے اور آخری ٹیسٹ میں مل رہا ہے جو  آج سے میرپور میں صبح نو بجے شروع ہوگا۔پاکستانی ٹیم اس دورے میں ابھی تک کوئی بھی میچ نہیں جیت سکی۔یہ پہلا موقع تھا کہ بنگلہ دیشی ٹیم نو ٹیسٹ میچوں میں پاکستان سے نہیں ہاری۔راحت علی کے زخمی ہونے کے بعد پاکستان اے کے ساتھ سری لنکا کا دورہ کرنے والے فاسٹ بائولر بلاول بھٹی ڈھاکہ بلائے گئے ہیں۔دوسرے ٹیسٹ میں پاکستانی ٹیم میں کسی تبدیلی کا امکان بظاہر دکھائی نہیں دیتا۔بنگلہ دیشی فاسٹ بائولر روبیل حسین بھی ان فٹ ہوگئے ہیں جبکہ کپتان مشفق الرحیم کی انگلی بھی زخمی ہے۔دوسرے ٹیسٹ کیلئے مصباح الیون نے تیاریوں کو حتمی شکل دے دی۔کپتان مصباح الحق نے کھلاڑیوں کو بیٹنگ، بائولنگ اور فیلڈنگ میں بہتری کے لئے سخت محنت کی ہدایت کردی۔ شاہین دورے کا اختتام  جیت پر کرنے کیلئے پرعزم ہیں۔پریکٹس کے دوران پاکستان ٹیم نے خامیاں سدھارنے پر توجہ دی۔ سپنرز پر کوچز کی خاص نظر رہی، یاسر شاہ اور ذوالفقار بابربائولنگ کی کاٹ بڑھاتے رہے تو سعید اجمل بھی نیٹ پر لمبے سپیل کراتے رہے۔ بلے بازوں نے بھی اپنی تکنیک بہتر بنائی،کوچز فیلڈنگ اور کیچ پریکٹس کراتے رہے۔ مصباح الحق نے کہا ہے کہ بنگلہ دیش کمزورحریف نہیں،دوسرا ٹیسٹ جیتنے کیلئے ٹیم کو بیٹنگ ، بائولنگ اور فیلڈنگ میں بہتری لانا ہوگی۔سیریز کے نتائج کی بجائے سارا فوکس کھیل پر ہے۔پوری تیاری کے ساتھ میدان میں اترینگے۔ڈھاکہ کی وکٹ کھلنا سے مختلف ہے نتیجہ ضرور آئے گا۔ہم سب کو مل کر سوچنا چاہئے پاکستان کرکٹ اس حال میں کب‘کیسے اور کیوں پہنچی ؟انٹر نیشنل کرکٹ پریشرکا نام ہے صرف جیت نہ ملنے سے دبا ئو نہیں ہوتا۔پاکستانی ٹیم اچھا کھیلنے اور جیتنے کی کوشش کر رہی ہے اور اب بھی جیتنے کی کوشش کرینگے۔بائولرز کو وکٹ سے مدد ملنے کا امکان ہے۔ بائولنگ میں بہتری کی ضرورت ہے۔عمران خان جونیئر کو کھلانے کا آپشن  زیرغور ہے۔زمبابوے کے پاکستان آنے سے نئے دور کا آغاز ہوگا‘بہت زیادہ خوشی محسوس کر رہا ہوں ۔شائقین قومی کرکٹرز کو ہوم گرائونڈ پر کھیلتا دیکھنے کو ترس گئے ہیں۔بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم کے کپتان مشفیق الرحیم نے کہا کہ اگر پاکستان سے دوسراٹیسٹ میچ جیت گئے تو یہ اپ سیٹ نہیں ہوگا۔آخری میچ بھی جیت کر دورہ کااختتام فتح پر کرینگے۔میچ میں بیس وکٹیں حاصل کرنا  ٹارگٹ ہے ۔ روبیل حسین زخمی ہیں متبادل کا فیصلہ نہیں کیاہے۔تمام کھلاڑی جیت کیلئے پر عزم ہیں اور کوشش کرینگے کہ پاکستان کو دورے کا کوئی بھی میچ نہ جیتنے دیں۔ہم دو یا تین فاسٹ بائولر زکے ساتھ کھیلیں گے ‘اگر ایک پیسر کم کیا تو کسی سپیشلسٹ سپنر کو شامل کرینگے۔