قومی کرکٹرز کیلئے سالانہ ایوارڈ تقریب 2 سال سے التوا کا شکار

لاہور(چودھری اشرف) پاکستان کرکٹ بورڈ کے حکام کی مسلسل مصروفیات کی بنا پر سابق چیئرمین ذکاء اشرف کے دور میں قومی اور بین الاقوامی سطح پر کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے کھلاڑیوں کیلئے شروع کی جانے والی سالانہ ایوارڈ تقریب دو سال سے التوا کا شکار چلی آ رہی ہے جس کے باعث ڈومیسٹک اور انٹرنیشنل سطح پر پرفارم کرنے والے کھلاڑیوں میں بددلی پھیلنا شروع ہو گئی ہے۔ پی سی بی کو میڈیا رائٹس اور آئی سی سی کی جانب سے بھاری رقم موصول ہونے کے باوجود مسلسل سالانہ ایوارڈ کی تقریب تاخیر کا شکار چلی آ رہی ہے ‘ 2013 اور 2014ء میں   تقریب نہیں ہوسکی۔  کھلاڑیوں کانے نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر کہنا تھا کہ بورڈ پر بھی ملکی سیاست کے اثرات نمایاں ہونا شروع ہو گئے ہیں جس کی بنا پر بورڈ حکام نے سالانہ ایوارڈ تقریب کو نظر انداز ہی کر دیا ہے۔ گذشتہ دو سالوں میں پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان مصباح الحق نے جس طرح پاکستان کرکٹ کو سنبھالے رکھا ان کا حق بنتا تھا کہ سالانہ ایوارڈ تقریب میں انہیں اعزاز سے نوازا جاتا لیکن کرکٹ بورڈ میں چلنے والی سیاست کی بنا پر تقریب منعقد نہیں کی جا رہی ہے۔ بورڈ نے گذشتہ سال اور رواں سال بھی سالانہ ایوارڈ تقریبکا پروگرام بنایالیکن سپانسر شپ نہ ملنے کی بنا پر اسے تاخیری حربے استعمال کرتے ہوئے نظر انداز کیا جا رہا ہے۔