ورلڈ ہاکی لیگ میں قومی ٹیم کی ناقص کارکردگی پر سابق اولمپئنز ناخوش

ورلڈ ہاکی لیگ میں قومی ٹیم کی ناقص کارکردگی پر سابق اولمپئنز ناخوش

لاہور (سپورٹس رپورٹر) ہاکی ورلڈ لیگ سیمی فائنل ٹورنامنٹ کے کوارٹرفائنل شکست پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے سابق اولمپئنز کا کہنا ہے کہ قومی ٹیم نے کوریا کے خلاف میچ میں بھی عمدہ کھیل پیش کیا تاہم ید قسمتی سے میچ میں کامیابی حاصل نہ ہو سکی ہے۔ پاکستان ٹیم میں اتنی صلاحیت موجود ہے کہ وہ کسی بھی حریف ٹیم کو شکست سے دوچار کر سکتی ہے۔ سابق اولمپئن دانش کلیم کا کہنا تھا کہ عالمی کپ کوالیفائنگ را¶نڈ تھا۔ بہتر ہوتا پاکستان ٹیم اسی ٹورنامنٹ میں کامیابی حاصل کر کے میگا ایونٹ کےلئے کوالیفائی کر جاتی اب ایشیا کپ میں پاکستان ٹیم کو آل آ¶ٹ جانا ہوگا۔ سابق اولمپیئن محمد اخلاق کا کہنا تھا کہ کوریا کی ٹیم پاکستان کے مقابلے میں سخت تھی، میچ سے قبل ہی اس بات کا ڈر تھا کہ کوریا کی ٹیم جو تیز کھیلنے کی مہارت رکھتی ہے اس کے خلاف کامیابی کے لئے کھلاڑیوں کو سخت محنت کرنا ہوگی۔ 2014ءمیں منعقد ہونے والے عالمی کپ کے لئے کوالیفائی کرنے کےلئے اب پاکستان ٹیم کو ایشیا کپ جیتنا ہو گا۔ سابق اولمپئن اور پی ایچ ایف کی سلیکشن کمیٹی کے سابق رکن ارشد چوہدری نے کہاکہ کھلاڑیوں نے گو کوریا سے جیت سے مواقع گنوا دیا گیا جس کی ذمہ داری مینجمنٹ پر عائد ہوتی ہے ۔