دانش کنیریا کی درخواست....سندھ ہائیکورٹ کا پی سی بی سیکرٹری کھیل سے جواب طلب

کراچی (نیٹ نیوز) سندھ ہائیکورٹ نے دانش کنیریا کی درخواست پر سیکرٹری سپورٹس اور پاکستان کرکٹ بورڈ سے جواب طلب کر لیا۔ ٹیسٹ کرکٹر دانش کنیریا نے پی سی بی کے خلاف سندھ ہائیکورٹ میں پٹیشن دائر کی تھی جس میں انہوں نے وفاق اور پی سی بی کو فریق بناتے ہوئے م¶قف اختیار کیا ہے کہ برطانوی پولیس، ایسیکس کا¶نٹی اور آئی سی سی انہیں سپاٹ فکسنگ الزامات سے کلیئر کر چکی ہے لیکن پی سی بی انہیں کلیئرنس سرٹیفکیٹ نہیں دے رہا۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ بورڈ انہیں نظرانداز کر رہا ہے۔ عدالت میرٹ کی بنیاد پر سلیکشن کرنے کی ہدایت کرے۔ وہ مکمل فٹ ہیں اور ٹیم کی نمائندگی کیلئے تیار ہیں۔ بورڈ نے ان سے جو کچھ بھی مانگا وہ فراہم کر چکے ہیں۔ دریں اثناءسندھ ہائیکورٹ نے پی سی بی اور سیکرٹری کھیل کو 26 جولائی کے نوٹسز جاری کرتے ہوئے پی سی بی کو پابند کیا ہے کہ دانش کنیریا قومی اثاثہ ہیں، ان کی تضحیک بند کی جائے۔ سندھ ہائیکورٹ میں جسٹس اطہر سعید اور جسٹس محمدعلی مظہر پر مشتمل دو رکنی بنچ کے روبرو دانش کنیریا کے وکیل ڈاکٹر فروغ نسیم نے م¶قف اختیار کیا کہ ان کے موکل کو انگلینڈ میں سپاٹ فکسنگ سکینڈل کے الزامات سے کلیئر کیا جا چکا ہے۔ انہوں نے مطلوبہ دستاویزات بھی بورڈ کو دیدئیے اس کے باوجود پی سی بی انہیں سلیکٹ نہیں کر رہا۔ وکیل کے مطابق عدالت نے پی سی بی کو پابند کیا ہے کہ لیگ سپنر کے بارے میں تضحیک آمیز زبان استعمال نہ کی جائے۔ اس موقع پر دانش کنیریا نے کہا کہ وہ پُرامید ہیں کہ انہیں انصاف ضرور ملے گا۔