آئی سی سی کے چیف ایگزیکٹو نے کہا ہے کہ سپاٹ فکسنگ میں ملوث پاکستانی کرکٹرز فیصلے کے خلاف اپیل نہیں کرسکیں گے۔

آئی سی سی کے چیف ایگزیکٹو نے کہا ہے کہ سپاٹ فکسنگ میں ملوث پاکستانی کرکٹرز فیصلے کے خلاف اپیل نہیں کرسکیں گے۔

برطانوی خبررساں ادارے کو انٹرویو میں ہارون لورگاٹ نے کہا کہ ہم دنیا کو یہ واضح طورپربتانا چاہتے ہیں کہ کوئی بھی کھلاڑی میچ یا سپاٹ فکسنگ میں ملوث ہوا تو اس کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے ٹربینول کے تینوں ججوں پر اعتماد کا اظہارکیا۔ انہوں نے بتایا کہ ہم نے شواہد اکھٹے کرنے کے لئے کافی محنت کی ہے اور ہم الزامات کو ثابت کرنا چاہتے ہیں۔ ہارون لورگاٹ کا کہنا تھا کہ میچ فکسنگ کی روک تھام کے لئے آئی سی سی کے حالیہ اقدامات سے کھیل کو شفاف بنانے میں مدد ملے گی۔ آئی سی سی کے چیف ایگزیکٹو نے اس سلسلے میں پاکستان کرکٹ بورڈ کے اقدامات کی بھی تعریف کی۔ مائیکل بیلوف کی سربراہی میں ایپلٹ ٹربینول چھ سے گیارہ جنوری تک پاکستانی کھلاڑیوں سلمان بٹ، محمد آصف اور محمد عامر کے خلاف کیسز کی سماعت کرے گا۔