سیالکوٹ: چناب میں پانی روکنے کا سلسلہ جاری، ہیڈمرالہ آمد 4 ہزار 660 کیوسک رہ گئی

سیالکوٹ(نامہ نگار) سندھ طاس معاہدہ کی خلاف ورزی کرتے ہوئے بھارت نے مقبوضہ کشمیر کے علاقہ میں بگلیہارڈیم پر دریائے چناب کا پانی روکے جانے کی وجہ سے ھیڈمرالہ کے مقام پر پانی کی آمد صرف پانچ ہزار چار سو ساٹھ کیوسک رہ گئی۔ پانی کی کمی کی وجہ سے دریائے چناب کاایک بہت بڑا حصہ خشک ہوچکا ہے اور نہرمرالہ راوی لنک بند ہے۔ ہیڈمرالہ کے مقام سے دریائے چناب سے نکلنے والی دوسری نہر اپرچناب میں بھی صرف چار ہزار ایک سو بیاسی کیوسک پانی چھوڑا جارہا ہے ۔ محکمہ ایری گیشن کے مطابق بھارت نے دریائے چناب کا پانی تین ماہ سے روک رکھا ہے حالانکہ ماضی میں بھی ہر سال بھارت دریائے چناب کا پانی روک لیتا ہے جس کی وجہ سے لاکھوں ایکٹر پاکستانی زرعی رقبے پرفصلوں کو نقصان پہنچ چکا ہے اور مقبوضہ کشمیر سے آنے والے دودیگر دریائوں دریائے مناور توی میں پانی کی آمد صرف پانچ سو54کیوسک اور دریائے جموں توی میں پانی کی آمد ایک ہزار ایک سو67کیوسک ہے ۔