ساہیوال : تین سالہ بچے کے قاتل کو سزائے موت اور پانچ لاکھ بیس ہزار روپے جرمانہ کی سزا

ساہیوال (نمائندہ نوائے وقت)ایڈیشنل سیشن جج ساہیوال چوہدری سعید اختر سندھو نے ہڑپہ شہر کے 3سالہ بچے کے اغواء اور قتل کے مقدمہ میں ملزم سانول کو سزائے موت، پانچ لاکھ روپے بیس ہزار روپے جرمانہ کی سزا سنائی، عدم ادائیگی جرمانہ مجرم کو سات ماہ کی مزید قید بھگتنا ہوگی۔ عدالت نے بچے کی نعش تالاب میں پھینک کر غائب کرنے کے جرم میں سات سال قید سخت کی بھی سزا سنائی۔ استغاثہ کے مطابق 25دسمبر 2015کو محلہ شہیداں کے محمد سعید ملک کے کمسن 3سالہ بیٹے محمد حسین کو اغواء کے بعد ہوس کا نشا نہ بنا کر قتل کر کے لاش گندے پانی کے تالاب میں پھینک دی تھی ، پولیس ہڑپہ نے مقدمہ -201-302ت پ در ج کر کے ملزم سانول کو گرفتار کر لیا تھا ۔
سزا