امریکی حاشیہ بردار گستاخ رسول کے پشت پناہ ہیں

گل محمد بھٹہ
توہےن رسالت کا ارتکاب اےک ناقابل معافی جرم ہے۔ اسلامی قوانےن کے مطابق اسکے مرتکب شخص کو سزا ہونی چاہےے۔ مولانا الےاس چنےوٹی ا نٹرنےشنل ختم نبوت موومنٹ پاکستان کے امےر اورممبر صوبائی اسمبلی پنجاب مولانا محمد الےاس چنےوٹی جوان دنوں حج کی سعادت حاصل کرنے سعودی عرب آئے ہوئے ہےں انہوں نے بےوروچےف روزنامہ نوائے وقت الرےاض سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آسےہ بی بی نے نبی کرےم کی توہےن کرکے تمام مسلمانان عالم کی دلآزاری کی ہے اور توہےن انبےاءاےسا جرم ہے کہ جس کی معافی نہےں ہوسکتی۔ آئمہ اربعہ اس بات پر بھی متفق ہےں کہ توہےن انبےاءکا مرتکب ہے عدالت مےں جانے سے پہلے معافی مانگے ےا بعد مےں اس کا کوئی اعتبار نہےں ہے کےونکہ اس سے جس اعلٰی وارفع ذات کی توہےن ہوئی ہے اس کے علاوہ کوئی اور اس کی معافی نہےں دے سکتا ہے کہ وہی ہادی برحق اور صاحب اختےار ہے وہ اگر معاف نہ کرے تو صدر ےا کسی اور شخصےت کومعافی دےنے کا کوئی خصوصی ےا صوابدےدی اختےار نہےں ہے۔ اس قسم کے لوگ کہتے ہےں کہ ہمےں اب اپنی غلطی کا احساس ہوا ہے اس طرح کی مذموم جسارت تو اللہ کے پےارے رسول کے ساتھ کی جائے اس کا کوئی مسلمان تصوربھی نہےں کرسکتا۔ اللہ تعالیٰ کا فرمان ہے کہ ”کےا اللہ اس کی آےات اور رسول کے ساتھ مذاق کرتے ہو“
مسلمان کس طرح اجازت نہےں دے سکتے کہ کوئی بھی کسی بھی نبی کے ساتھ مذاق کرے ےا اس کی توہےن کرے امرےکہ کی سازش ہے کہ پاکستان مےں کسی بھی طرح بدامنی اور افراتفری پےدا کی جائے اس کے لئے امرےکہ مختلف حےلے بہانے کررہا ہے اور مسلمانوں کے جذبات کو برانگےختہ کررہا ہے امرےکہ کے حاشےہ برداروں سے جب کچھ بن نہےں پاتا تو آسےہ جےسے بدنام زمانہ لوگوں سے کبھی نبی کی شان مےں گستاخی کرواتے ہےں اور کبھی اس قماش کے لوگوں سے نبوت کے دعوے کروائے جاتے ہےں تاکہ پاکستانی آپس مےں برسرپےکار ہوجائےں اور امرےکہ کی بن آئے ورنہ ان لوگوں سے پہلے تو ہےن انبےاءکروانا پھرانہےں اور ان کی خاندان کو اپنے ہاں پناہ دے دےنے کے آخر کےا معنی ہوسکتے ہےں؟ گزشتہ دنوں پاکستان کے ضلع بہاول نگر مےں ےکے بعد دےگرے تےن آدمےوں نے نبوت کا دعویٰ کےا ہے اور دوران تفتےش انہوں نے اعتراف کےا ہے کہ نارووال مےں چمن سرکار رہتے ہےں جونعوذ باللہ ان کے اللہ ہےں اور اس نے ان جےسے 25 آدمےوں کو نبی بناےا ہے مختلف اضلاع مےں نبوت کے ان مذموم دعوو¿ں کا کھےل کھےلا جاتا ہے ہماری جماعت انٹرنےشنل ختم نبوت موومنٹ نے ان جھوٹے مدعےان نبوت کے خلاف تو ہےن رسالت اےکٹ کے تحت مقدمات بھی درج کروائے ہےں افسوس ناک صورت حال ےہ ہے کہ جب ان سے مزےد پوچھ گچھ کی گئی تو انہوں نے کہا کہ ان کی مالی سپورٹ امرےکہ سے ہورہی ہے اس لئے پہلے آسےہ جےسے لوگوں سے دعویٰ نبوت کروانا پھر ان مجرموں کی پشت پناہی کرنا معنی خےز ہے اےسے لوگ کسی رعاےت کے مستحق نہےں ہےں صدر ےا کسی کو حق نہےں پہنچتا کہ اےسے مجرموں کی سزا کو معاف کردے عدالت بااختےار ہے کہ وہ دےکھے کہ اس نے جرم کےا ہے ےا نہےں اگر حق وانصاف اور قانون کی بالادستی کے لئے عدالت کے فرائض منصبی اور عرق رےزی کے بعد آخری فےصلہ صدر نے ہی کرنا ہے تو عدالتےں بٹھانے کی کےا ضرورت ہے اس لئے توہےن رسالت کا مرتکب ثابت ہونے پر کسی بھی شخص کو بغےر کسی رعاےت کے سخت سے سخت سزا دےنی چاہےے۔ اللہ کے پےارے رسول کی توہےن کرنے والے کو معافی دے کر آصف علی زرداری اللہ تعالیٰ کے فےض وغضب دعوت دے رہے ہےں قوم پہلے ہی کرپشن لوڈشےڈنگ مہنگائی اور سےلاب وقتل وغارت کے عذابوں مےں متبلا ہے اور خودکشےاں کررہی ہے ہم کسی نئے عذاب کے متحمل نہےں ہوسکتے تمام مسلمانوں کو تحفظ ناموس رسالت کےلئے متحد ہوجانا چاہےے۔