مقابلے میں میجر‘ ایلیٹ فورس کے چار اہلکار زخمی‘ تین دہشت گرد اور پی ایم سی کے دو طلبا گرفتار

فیصل آباد (نمائندہ خصوصی+ وقائع نگار خصوصی) حساس اداروں اور پولیس نے فیصل آباد میں دہشت گردی کا ایک بڑا منصوبہ ناکام بنا دیا‘ حاجی آباد میں دہشت گردوں کے ساتھ مقابلے میں میجر اور ایلیٹ فورس کے 4 اہلکار زخمی ہوگئے‘ پولیس وین تباہ ہوگئی‘ پولیس نے 2 مشتبہ دہشت گردوں اور پنجاب میڈیکل کالج کے دو زخمی طلباء کو گرفتار کرلیا جبکہ جائے وقوعہ سے بھاری مقدار میں اسلحہ اور خودکش جیکٹیں برآمد ہوئی ہیں جبکہ خاتون سمیت 3 دہشت گرد فرار ہوگئے۔ گرفتار دہشت گرد بیت اللہ محسود کے ساتھی نکلے جن میں ایک غیرملکی ہے۔ ملزمان کے قبضے سے درجنوں شہروں کے نقشے بھی برآمد ہوئے ہیں۔ پولیس ذرائع کے مطابق حساس ادارے کے میجر قاسم کو خفیہ ذرائعسیاطلاع ملی کہ حاجی آباد کے علاقہ یکتا مارکیٹ کے ایک مکان میں چند دہشت گرد پناہ گزین ہیں جس پر میجر قاسم نے ایلیٹ فورس کے جوانوں کے ہمراہ مکان پر چھاپہ مارا تو مبینہ دہشت گردوں نے ان پر اندھادھند فائرنگ شروع کردی اور 2 ہینڈگرنیڈ پھینکے جس کے نتیجہ میں میجرقاسم اور ایلیٹ فورس کے 4 اہلکار زاہد یوسف، جاوید اقبال، محمد عارف اور علی مرتضیٰ زخمی ہو گئے جبکہ پولیس وین تباہ ہوگئی جبکہ تینوں دہشت گرد فرار ہو گئے۔ حساس ادارے نے گردونواح میں سرچ آپریشن کرتے ہوئے علاقہ سے 2 مشتبہ افراد کو گرفتار کر کے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا ہے جبکہ پنجاب میڈیکل کالج میں بھی چھاپہ مار کر زخمی حالت میں موجود 2 طالب علموں کو گرفتا رکر لیا ہے۔ گرفتار ہونے والے سرگودھا کے عتیق اور فضل سے پوچھ گچھ کی جا رہی ہے۔ دریں اثناء ضلع بھر میں سکیورٹی کے انتظامات کو مزید سخت کردیا گیا ہے۔ ریلوے سٹیشن، لاری اڈہ، اے سی کوچز، سیشن کورٹ، امام بارگاہوں، مساجد، ملٹی نیشنل کمپنیوں، بنکوں کی سکیورٹی بڑھا دی گئی ہے۔ سادہ پارچات میں ملبوس حساس اداروں و پولیس کے ملازمین مشتبہ افراد کی گرفتاری کیلئے جنرل بس سٹینڈ، ریلوے سٹیشن، اے سی کوچز سٹینڈز پر تعینات کردیئے گئے ہیں۔ ہوٹلوں میں رہائش پذیر افراد کی جانچ پڑتال کی جا رہی ہے۔ پولیس نے فرار ہونے والے دہشت گردوں کی گرفتاری کیلئے فیصل آباد کو سیل کردیا ہے۔ گرفتار ملزموں کی نشاندہی پر دہشت گردوں کو معلومات فراہم کرنے والے شخص کو بھی غلام محمد آباد سے گرفتار کرلیا گیا۔ ذرائع کے مطابق گرفتار دہشت گردوں نے ابتدائی تفتیش میں بتایا ہے کہ فرار ہونے والے ملزمان ایمبولینس کے ذریعے دھماکہ کرسکتے ہیں۔ مدینہ ٹاؤن میں حساس اداروں اور دہشت گردوں کے مابین مقابلے کے بعد گرفتار ہونے والا طیب ٹیکسٹائل مل کا مالک نکلا جس کو 5 کروڑ تاوان کی خاطر 5 ماہ قبل اغوا کیا گیا تھا۔دریں اثناء حساس ادارے کے اہلکاروں نے مدینہ ٹاؤن میں چھاپے کے دوران گرفتار ہونے والے دہشت گرد کو لاہور منتقل کر دیا ہے اور معلوم ہوا ہے کہ اس کا نام رضا ہے اور تعلق بیت اللہ محسود سے بیان کیا جاتا ہے۔