جدید صحافت کے روح رواں حمید نظامی مرحوم نے زندگی کے آخری لمحوں تک آمریت کے خلاف جنگ لڑی۔

جامعہ پنجاب میں حمید نظامی مرحوم کی سنتالیسویں برسی کے موقع پر ایک تقریب کا اہتمام کیا گیا۔ اس موقع پر محترم حمید نظامی مرحوم کے بھائی اور آبروئے صحافت مجید نظامی اور فرزند عارف نظامی نے خصوصی طور پر شرکت کی۔ نوائے وقت گروپ کے ایڈیٹر ان چیف مجید نظامی نے کہا کہ حمید نظامی مرحوم نے آمروں سے لڑتے لڑتے جان دی اورمیں نے بھی ان ہی کے نقشِ قدم پر چلتے ہوئے مشکل ترین حالات میں بھی کبھی کسی سول یا فوجی آمر کی سامنے گھٹنے نہ ٹیکے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر ہماری شہ رگ ہے اور پاکستان کے حکمران بھارت کے پاکستان کو ریگستان بنانے کے ناپاک عزائم کے خلاف کچھ نہیں کر رہے۔ مجید نظامی کا کہنا تھا کہ میں نے اپنی زندگی میں صحافت کے علاوہ کچھ نہیں کیا اور اس دوران ہر دورِ حکومت میں اپنے بھائی کی طرح حق کی آواز بلند کی۔