ایران اور ترکی کے درمیان نئے دور کا آغاز ہو گا: احمدی نژاد

تہران (اے پی پی) ایرانی صدر محمود احمدی نژاد نے ایران اور ترکی کے درمیان جوہری ایندھن کے معاہدے کو نئے دور کا آغاز قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ عالمی برادری کو اب ایران کے جوہری پروگرام پر کوئی شکوک و شبہات نہیں ہونے چاہئیں۔ ایرانی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ایرانی صدر محمود احمدی نژاد نے اپنے ترک ہم منصب رجب طیب اردگان سے فون پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ایران اور ترکی میں جوہری ایندھن کا معاہدہ عالمی سیاسی تعلقات میں ایک نئے دور کا آغاز ہے اور عالمی برادری کو ایرانی جوہری پروگرام کے حوالے سے تمام شکوک ختم کرنا ہوں گے۔ انہوں نے معاہدہ طے پانے میں انقرہ کے کردار کو بھی سراہا۔ اس موقع پر رجب طیب اردگان نے کہا کہ دنیا کو اب ایران کے جوہری پروگرام پر کوئی اعتراض نہیں ہونا چاہیے۔ دوسری جانب ایرانی وزیر خارجہ نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کے نمائندہ خصوصی برائے افغانستان سے ملاقات کے دوران کہا کہ تہران کابل کے ساتھ ہر ممکن تعاون کےلئے تیار ہے کیونکہ غیر مستحکم افغانستان پورے خطہ کےلئے خطرہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ افغانستان میں بد امنی اور انتہا پسندی کا ذمہ دار ہے۔