ڈیڑھ دن کا تیل رہ گیا‘ عدم فراہمی پر آج شام سے کوئی ٹرین نہیں چل سکے گی

لاہور (فرخ بصیر سے) پی ایس او اور پیپکو نے پونے 2 ارب روپے کی نادہندگی پر ریلوے کا تیل اور بجلی بند کر دی اگر ریلوے کو فوری طور پر تیل کی فراہمی شروع نہ ہوئی تو آج (منگل) شام کے بعد کوئی ٹرین نہیں چل سکے گی جبکہ پیپکو نادہندگی پر اب تک لاہور سمیت 97 ریلوے سٹیشنوں کی بجلی کاٹ چکا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ریلوے کے پاس فی الوقت مجموعی طور پر ڈیڑھ دن کا تیل بچا ہے جبکہ اس نے پی ایس او کے ایک ارب 83 لاکھ روپے دینے ہیں جن میں سے 38 کروڑ روپے کے 17 چیک ابھی تک وزارت ریلوے سے کلیئرنس کے منتظر ہیں۔ اس وقت صرف ملتان، پشاور اور کندیاں میں دو، دو دن، روہڑی، لاہور، فیصل آباد اور راولپنڈی میں ایک ایک دن اور لالہ موسیٰ میں آدھے دن کے ڈیزل کا ذخیرہ ہے جبکہ کوئٹہ میں تیل ختم ہوچکا ہے لہٰذا وہاں سے آج کوئی ٹرین روانہ نہیں ہو سکے گی۔ دوسری طرف پیپکو نے 55 کروڑ 30 لاکھ روپے کی عدم ادائیگی پر ریلوے کے مجموعی طور پر 97 سٹیشنوں کی بجلی کاٹ دی ہے جس میں کوئٹہ ڈویژن کے 7، پشاور اور راولپنڈی ڈویژن کے 8، 8، لاہور ڈویژن کے 18، ملتان کے 30 اور سکھر اور کراچی کے 13، 13 سٹیشن بجلی کٹنے کے باعث تاریکی میں ڈوب چکے ہیں۔ ڈی ایس لاہور نے بجلی کٹنے کے بعد رہائشی کالونیوں میں ہینڈ پمپ لگوانے شروع کر دئیے ہیں تاکہ کم از کم پانی کی فراہمی ممکن بنائی جا سکے۔