لاہور ہائیکورٹ نے یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کو عذرا ناہید میڈیکل کالج کے معاملات مےں مداخلت سے روک دیا

لاہور (وقائع نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کو عذرا ناہید میڈیکل کالج کے معاملات مےں مداخلت سے روک دیا۔ تفصیلات کے مطابق عذرا ناہید میڈیکل کالج کی طرف سے دائر یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے غیر قانونی اقدامات کے خلاف رٹ کو منظور کرتے ہوئے عبوری حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز اور دیگر مدعا علیہان کو ہدایت کی ہے کہ وہ آئندہ عدالتی احکامات تک عذرا ناہید میڈیکل کالج اور اس کی فیکلٹی کی تعلیمی خدمات مےں کسی بھی طرح کی مداخلت نہ کرے اور ان کو جواب طلبی کا نوٹس جاری کر دیا ہے۔ ہائیکورٹ کے نوٹس کے متعلق گفتگو کرتے ہوئے عذرا ناہید میڈیکل کالج کے پرنسپل ڈاکٹر محمد اکبر چودھری نے کہا کہ یہ امر خوش آئند ہے کہ عدالت نے ہمارے موقف کی تائید کرتے ہوئے یو ایچ ایس کو نوٹس جاری کیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سپیریئر گروپ آف کالجز کہ عذرا ناہید میڈیکل کالج کو طب کے شعبے مےں دنیا کے بہترین کالجوں مےں سے ایک بنا دینگے۔