ایرانی مسافر طیارہ دوران پرواز تباہ 6 امریکیوں سمیت 170 افراد ہلاک

تہران (آئی این پی) ایران کا روسی ساختہ مسافر طیارہ آگ لگنے کے بعد فضا میں ہی ٹکڑوں میں تقسیم ہو کر تباہ ہوگیا جس سے طیارے میں سوار 6 امریکیوں سمیت 170 افراد ہلاک ہو گئے۔ تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز تہران سے آرمینیا جاتے ہوئے قزوین شہر کے قریب کیسپیئن ایئر لائنز کے مسافر طیارے کی ٹیل میں آگ لگ گئی جس سے طیارہ قلابازیاں کھاتے ہوئے فضا میں ہی ٹکڑوں میں تقسیم ہو کر تباہ ہو گیا۔ طیارے کا ملبہ کئی کلو میٹر تک کے علاقے میں پھیل گیا اور طیارے میں سوار افراد کی لاشیں بھی ٹکڑوں میں تقسیم ہو گئیں۔ یہ جیٹ طیارہ تہران کے امام خمینی انٹرنیشنل ایئر پورٹ سے اڑا اور صرف 16 منٹ کے بعد قزوین شہر کے قریبی گائوں جنت آباد میں گر کر تباہ ہوا، طیارے کا بلیک باکس تلاش کیا جا رہا ہے۔ آرمینیا کی سول ایوی ایشن اتھارٹی کے ڈپٹی چیئرمین آرسن پوگوسیان نے اخبار نویسوں کو بتایا کہ طیارے میں 154 مسافر اور عملے کے 15 ارکان سوار تھے جن میں 6 امریکی اور 2 جارجیا کے باشندے بھی شامل ہیں۔ قزوین ایمرجنسی سروسز ڈائریکٹر حسین بیزاد کے مطابق کسی کے بچنے کا کوئی امکان نہیں۔ صدر محمود احمدی نژاد نے حادثے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اس کی تحقیقات کا حکم دیدیا ہے۔ معلوم ہوا ہے کہ طیارے پر ایران کی قومی یوتھ جوڈو ٹیم کے 8 ارکان 2 ٹرینر اور وفد کا سربراہ بھی سوار تھے جو آرمینیا میں تربیت دینے کیلئے جا رہے تھے۔