مشال خان قتل کیس ‘ مزید 4گواہوں کے بیان قلمبند،سماعت18اکتوبر تک ملتوی

ہری پور(نامہ نگار+صباح نیوز)سینٹرل جیل ہری پور میں قائم انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں مشال قتل کیس کی سماعت کے دوران مزید 4گواہوں کے بیانات قلمبند کرلئے گئے جبکہ کیس کی سماعت18اکتوبر تک ملتوی کر دی گئی ۔جمعرات کوطالب علم مشال خان قتل کیس کی سماعت سینٹرل جیل ہری پور میں ہوئی ،انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت کے جج فضل سبحان خان نے مقدمے کی سماعت کی، مقدمے میں ملوث تمام ملزمان کو عدالت میں پیش کیا گیا تھا۔سماعت کے دوران 4مزید گواہان سبز علی خان ،کوثرخان،گل شیر خان اور عالم زیب کے بیانات قلمبند کیے گئے۔اس موقع پر تین افراد سیف الاسلام، ایوب شاہ اور منیر کے بیانات ترک کر دیئے گئے ۔مشال قتل کیس میں اب تک 33گواہوں کے بیانات ریکارڈ کئے جا چکے ہیں۔ کیس میں 57ملزمان پر فرد جرم عائد کی جا چکی ہے۔ 25ملزمان کی درخواست ضمانتوں پر محفوظ فیصلہ 20اکتوبر کو سنایا جائے گا۔یاد رہے کہ عبدالولی خان یونیورسٹی کے طالب علم مشال خان کو رواں سال 13اپریل کو توہین مذہب کا الزام لگا کر مشتعل ہجوم نے تشدد اور فائرنگ کرکے قتل کر دیا تھا۔ مشال قتل کی متعدد ویڈیو سوشل میڈیا پر آنے کے بعد پولیس حرکت میں آئی اور واقعہ میں ملوث درجنوں افراد گرفتار کرلیے گئے تھے۔