ڈیرہ اسماعیل خان : مسجد کے باہر سے خودکش بمبار پکڑا گیا‘ ساتھی فرار

ڈیرہ  اسماعیل  خان :  مسجد  کے  باہر  سے  خودکش  بمبار  پکڑا  گیا‘  ساتھی  فرار

ڈیرہ اسماعیل خان (ریڈیو نیوز) ڈیرہ اسماعیل خان میں مسجد لاٹو فقیر کے باہر سے عوام نے مشتبہ خودکش بمبار کو پکڑ لیا۔ پولیس کے مطابق خودکش حملہ آور نے بارودی جیکٹ پہن رکھی تھی اور اس کی عمر 14 سال ہے۔ ڈی پی او ناصر نے بتایا کہ بم ڈسپوزل سکواڈ نے بارودی جیکٹ کو ناکارہ بنا دیا ہے۔ پولیس نے خودکش حملہ آور کو نامعلوم مقام پر منتقل کر کے تفتیش شروع کر دی ہے۔ خودکش حملہ آور کو پکڑنے پر لوگوں میں شدید اشتعال پایا گیا۔ مشتعل افراد خودکش بمبار کو مارنا چاہتے تھے۔ نجی ٹی وی کے مطابق خودکش حملہ آور کا ساتھی فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا۔ گرفتار خودکش بمبار نے اپنا نام شکیل بتایا ہے اور اس کا تعلق درہ آدم خیل سے ہے اسے تین روز پہلے ڈیرہ اسماعیل خان کے ایک گھر میں پہنچایا گیا۔این این آئی کے مطابق چوچک کے نواحی گائوں میں چھاپہ مارکر مبینہ دہشت گرد کو گرفتار کرکے خودکش حملہ میں استعمال ہونیوالا سامان برآمد کر لیا۔ ذرائع کے مطابق موضع تاتار میں جنرل کونسلر اکرم بلوچ کے بھائی زاہد بلوچ کے گھر پر سکیورٹی اہلکاروں نے لاہور بم دھماکوں کے مبینہ دہشت گرد ملزم کالی ماچھی کی نشاندہی پر چھاپہ مارا اور زاہد بلوچ اور لاہور بم دھماکوں کے مبینہ دہشت گرد ریاست عرف ریاسو کو گرفتار کر لیا۔