بجلی کی لوڈشیڈنگ میں اضافہ، معمولات زندگی مفلوج، شہری پریشان

سرگودھا+ پھلروان (نامہ نگار) بجلی کی لوڈشیڈنگ کا دورانیہ شہری علاقوں میں 14 اور دیہات میں 18 گھنٹے تک جا پہنچا جس سے کاروبار زندگی مکمل طور پر مفلوج ہو کر رہ گیا ہے۔ لوڈ شیڈنگ سے ہر قسم کی کاروباری، تجارتی، تعلیمی اور دیگر سرگرمیاں ٹھپ ہوگئی ہیں، گھروں میں پینے کا پانی بھی ناپید ہو چکا ہے۔ صارفین کا کہنا ہے کہ اس سے تو سابقہ حکومت ہی بہتر تھی اس نے کم ازکم بجلی کے نرخوں میں تو ہوشربا اضافہ نہیں کیا تھا۔ دکانداروں، تاجروں اور کاروباری افراد کا کہنا ہے کہ طویل لوڈشیڈنگ عذاب بن چکی ہے جس سے معاشی بدحالی میں بھی اضافہ ہورہا ہے۔ پھلروان سے نامہ نگار کے مطابق بجلی کی لوڈ شیڈنگ 16 گھنٹے تک جا پہنچی، دو سے تین گھنٹے مسلسل بجلی بند رہنے سے عوام پریشان، کاروبار ٹھپ، مزدور بےروزگار ہو کر رہ گئے، شہریوں نے مطالبہ کیا ہے کہ بجلی بندش کا سلسلہ بند کیا جائے۔
لوڈ شیڈنگ